پنڈدادنخاناہم خبریں

پنڈدادنخان کے بیشتر دیہاتوں اور قصبوں کے مکین ترقی یافتہ دور میں بھی پینے کے صاف پانی سے محروم

تحصیل پنڈدادنخان کے بیشتر دیہاتوں اور قصبوں کے مکین ترقی یافتہ دور میں بھی پینے کے صاف پانی سے محروم ،دھریالہ جالپ میں پبلک ہیلتھ کی بے حسی کے باعث اہل علاقہ واٹر سپلائی کا گندہ پانی پینے پر مجبور ہیں۔

پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے لیے سماجی تنظیمیں فرشتہ بن کر میدان میں اتر آئیں، واٹر فلٹریشن پلانٹس کی تنصیب کے باعث عوام کی مشکلات میں کمی آئی، اتھر اور بھیلووال کے بعد ٹیکنیکل کالج پنڈدادنخان اور پھر واٹر سپلائی سے محروم غریب وال گاؤں میں بھی گزشتہ روز آر او پلانٹ تنصیب کر دیا گیا۔

وبائی صورت حال کے پیش نظر افتتاحی تقریب کو مختصر کر دیا گیا جس میں ان رفاعی تنظیموں کے سربراہان کو مقامی عمائدین کی جانب سے بھر پور ویلکم اور انکا شکریہ ادا کیا گیا جبکہ دھریالہ جالپ میں محکمہ پبلک ہیلتھ کے باعث اہل علاقہ گندہ پانی پینے پر مجبور ہیں، عرصہ دراز سے والوو ہول اور ٹینک کی صفائی نہ ہونے کے باعث لوگوں بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

علاقہ مکینوں کو علاقہ سے 4کلو میٹر دور پولٹری فارم سے صاف پانی بھرنا پڑتا ہے، واضح رہے کہ تحصیل پنڈدادنخان کے کوہستان نمک کے قرب و جوار کے دیہات اور گاؤں کے باسی پینے کے صاف پانی جیسی نعمت سے نہ صرف محروم چلے آ رہے ہیں بلکہ پیٹ کے اور گلہڑ جیسے امراض سے بھی ان کا سامنا رہتا تھا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button