جہلم

جہلم اور ملحقہ علاقوں میں بغیر معائنہ بیمار اور مضر صحت جانوروں کو گھروں میں ذبح کئے جانے کا انکشاف

جہلم: شہر سمیت ملحقہ علاقوں میں بغیر معائنہ بیمار اور مضر صحت جانوروں کو سلاٹر ہاؤس میں ذبح کرنے کی بجائے گھروں میں ذبح کئے جانے کا انکشاف ، لاغر بیمار اور مضر صحت گوشت کے استعمال سے شہری مختلف موذ ی امراض میں مبتلا ہونے لگے ، فریزر لگے باسی گوشت کی بھی کھلے عام فروخت کیا جارہا ہے ، ارباب اختیار فرائض سے چشم پوشی اختیار کرنے لگے ، ذمہ داران دفتر وں میں بیٹھ کر سب اچھا ہے کی رپورٹس جاری کرنے میں مصروف ہیں۔
تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ملحقہ علاقوں میں قصابوںنے محکمہ لائیو سٹاک سمیت حکومت پنجاب کے احکامات ہوا میں اڑانے کے ساتھ ساتھ لاغر، بیمار، نیم مردہ مادہ جانوروں کو نالوں کے اوپر ذبحہ کرنا شروع کر رکھا ہے ،جس پر محکمہ لائیو سٹاک کے ڈاکٹروں کی کارکردگی بھی سوالیہ نشان بن چکی ہے۔
بااثر قصاب علی الصبح نیم مردہ جانوروں کو ذبحہ کرکے دکانوں کے باہر گندے نالوں کے اوپر لٹکا دیتے ہیں ، جس پر مکھیاں مچھر اور دیگر حشرات بھنبھناتے نظر آتے ہیں جراثیم زدہ گوشت استعمال کرنے سے شہری بھی موذی امراض میں مبتلا ہو رہے ہیں۔
شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت پنجاب نے مادہ جانور کو ذبحہ کرنے پر پابندی عائد کررکھی ہے اور قصابوں کو دکانوں کے باہر جالیاں لگانے کے احکامات جاری کر رکھے ہیں ضلع بھر میں کسی بھی دکاندار نے نہ تو جالیاں لگائی ہیں اور نہ ہی ذبحہ کئے گئے گوشت کو وٹنری ڈاکٹر سے چیک کروایا جاتا ہے جس کیوجہ سے شہری موذی امراض میں مبتلا ہو رہے ہیں۔
شہریوں نے کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button