جہلمتارکین وطناہم خبریں

برطانیہ کی جانب سے پاکستان کو ریڈ لسٹ میں ڈالنے کی ہر پاکستانی نژاد کو مذمت کرنے چاہئے۔ مقدسہ بانو

جہلم/مانچسٹر: برطانوی سیکرٹری خارجہ ڈومینک راب کی جانب سے پاکستان کو ریڈ لسٹ میں ڈالے جانے کے اقدام کی ہر پاکستانی نژاد برطانوی شہری کو مذمت کرنی چاہیے، گزشتہ سالوں میں بھی ایسا رویہ اختیار کیا جاتا رہا ۔

ان خیالات کا اظہار مانچسٹر سے لیبر پارٹی کی کونسلرکی امیدوار مقدسہ بانو نے ٹیلی فونک رابطے پر پارلیمنٹ ممبر افضل خان کو موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ امتیازی سلوک پاکستانی کمیونٹی سے کیوں کیا جارہا ہے؟ اور کب تک یہ سلسلہ جاری رہے گا ؟برطانوی وزیر خارجہ کو جدید سائنسی علوم سے بھی آگاہی دی جائے تاکہ وہ اپنے اعداد و شمار کی سمت درست کرسکیں۔

انہوں نے کہا کہ ڈومینک راب کی جانب سے پابندی عائد کر نے کی وجہ پاکستانی کمیونٹی میں دکھ کے ساتھ غم و غصہ بھی پایا جاتا ہے۔پاکستان میں اس وقت کثیر تعداد میں دوہری شہریت رکھنے والے بلیک میں ہوشربا قیمتوں پر ائیر ٹکٹ لینے پر مجبور ہیں ۔ائیر پورٹ پر بھی کمائی کی جارہی ہے اور مسافروں کو بے جا ذہنی دباؤ کا شکار کیا جا رہا ہے۔

مقدسہ بانو نے ٹیلی فونک رابطے پر پارلیمنٹ ممبر افضل خان سے جلد از جلد ایکشن پلان کی درخواست کی تاکہ پاکستان میں ذہنی دباو کا شکار برطانوی شہریوں کی داد رسی کی جاسکے اور پاکستان میں بھی بلیک میں ٹکٹ فروخت کرنے والے اداروں اور ٹریول ایجنسیوں پر بھی حکومت پاکستان سے سخت نوٹس لینے پر تحریری بیان جاری کرنے کی درخواست کی۔

مقدسہ بانو نے اس موقع پر ناز شاہ کو بھی خراج تحسین پیش کیا اور انکی کمیونٹی کی خدمات کو بھی سہراہا گیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button