جہلم

جہلم میں جامعہ علوم اثریہ کا 19 واں سالہ 2 روزہ فری آئی کیمپ اختتام ہو گیا

جہلم: جامعہ علوم اثریہ کا دو روزہ (19واں) سالانہ فری آئی کیمپ اختتام پذیر ہوا، دونوں روز مریضوں کا تاننا بندھا رہا، ہزاروں مریضوں کا چیک اپ اور سینکڑوں مریضوں کا آپریشن ہوا۔ اسلام صرف عبادات ہی کا مذہب نہیں، بلکہ یہ کامل دین ہے، جس میں عبادات کے ساتھ بنی نوع انسان کی سماجی خدمت پر بھی بہت زور دیا گیا۔

ان خیالات کا اظہار جامعہ علوم اثریہ جہلم کے مہتمم اور مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے نائب امیر حافظ عبدالحمید عامر فاضل مدینہ یونیورسٹی نے جامعہ علوم اثریہ میں 19ویں سالانہ فری آئی کیمپ کی افتتاحی تقریب میں موجود معززین، اساتذہ، طلبا، سماجی و سیاسی کارکنوں، مریضوں اور ان کے ہمراہ آنے والے لوگوں کے ایک بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے جہاں دینی علوم کی ترویج و اشاعت اور نوجوانوں کی تعلیم و تربیت کے لیے بین الاقوامی ادارہ ’’جامعہ علوم اثریہ‘‘ قائم کر رکھا ہے، وہیں یہاں سے ہر سال ہزاروں کی تعداد میں طلبا و طالبات دینی و دنیوی اور جدید علوم سے بہرہ مند ہوتے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ ہم نے عوام الناس کی فلاح و بہبود کے متعدد منصوبے شروع کر رکھے ہیں۔ اسی سلسلہ میں ہر سال ’’البصر انٹرنیشنل فاؤنڈیشن‘‘ اور ’’الابراہیم آئی ہسپتال‘‘ کے تعاون سے جامعہ علوم اثریہ میں سالانہ فری آئی کیمپ کا انعقاد کرتے ہیں۔

فری کیمپ میں نگران کیمپ مدیر الجامعہ حافظ احمد حقیق اور نائب مدیر الجامعہ حافظ عبدالغفور مدنی کے علاوہ مولانا سعد محمد مدنی، حافظ عمر عبدالحمید، مولانا عکاشہ مدنی، حاجی ملک محمد اقبال، رشید بٹ، ڈاکٹر شاہد تنویر جنجوعہ، ارشد محمود زرگر، صدیق احمد یوسفی،سیٹھی محمد ارشد، شکیل احمد سیٹھی، عامر ایوبی، عامر سلیم علوی کے علاوہ دیگر کئی معززین بھی موجود تھے۔

مہمانان خصوصی ڈائریکٹر الابراہیم آئی ہسپتال ڈاکٹر عبدالفتاح نے اپنے خطاب میں جہلم کی ضرورت کو مدنظر رکھتے ہوئے آنکھوں کے علاج کے لیے جہلم میں مستقل ہسپتال قائم کرنے کا ارادہ ظاہر کیا۔ ڈاکٹر سید شارق مسعود میڈیکل ڈائریکٹر نے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرز ہسپتال جہلم کے ایم ایس ڈاکٹر فاروق بندش اور سابق ایم پی اے مہر محمد فیاض نے اپنے خطابات میں جامعہ علوم أثریہ کے خدمت خلق کے کام کو بہت سراہا اور کہا کہ یہ فلاحی کام انسانیت کی اصل خدمت ہے۔

نگران کیمپ حافظ احمد حقیق اور حافظ عبدالغفور مدنی نے اپنے بیانات میں کیمپ کے بارے میں عوام الناس کو آگاہی دی۔

حافظ عبدالحمید عامر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہر سال بین الاقوامی ڈاکٹروں کی ٹیم یہاں ہزاروں مریضوں کا فری چیک اپ کرتے ہیں۔ مریضوں کو عینکیں اور دوائیں مفت فراہم کی جاتی ہیں اور آپریشن والے مریضوں کا مفت آپریشن کیا جاتا ہے۔ الحمد للہ آج تک کیے گئے تمام آپریشن کامیاب رہے۔ تمام مریضوں کی آنکھوں میں آئی او ایل لینز بھی فری ڈالے جاتے ہیں۔ مریضوں اور لواحقین کے لیے رہائش اور کھانے کا بھی فری انتظام کیا جاتا ہے۔

اس موقع پر حافظ عبدالحمید عامر نے مخیر حضرات کے عملی اور مالی تعاون کاشکریہ ادا کیا۔ کیمپ کی افتتاحی تقریب میں کیمپ منیجر ڈاکٹر رضوان بلوچ، ڈاکٹر مرتضیٰ سومرو، ڈاکٹر علی آفتاب، ڈاکٹر شاہجہان مینگل، ڈاکٹر نیتھن کمار، ٹیکنیکل انچارج نثار احمد گمرائی، عبدالکریم میمن اور ناصر احمد میمن موجود تھے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button