پنڈدادنخان عطائیوں کے نرغے میں، عطائی ڈاکٹر نے مریض کو غلط انجکشن لگا دیا، مریض کی حالت غیر

0

پنڈدادنخان: تحصیل پنڈدادنخان میں انتظامیہ کی بے حسی ولاپرواہی کے باعث عطائی ڈاکٹر انسانی جانوں سے کھیلنے لگے، پنڈدادنخان کے گاؤں وگھ میں شکیل نامی عطائی ڈاکٹر نے محمد طفیل کو غلط انجکشن لگا دیا جس کے باعث مریض کی حالت غیر ہو گئی ،تفتیشی افسر سب انسپکٹر اسلم کنڈل جعلی ڈاکٹر شکیل سے ساز باز میں مصروف جبکہ انتظامیہ عطائی ڈاکٹروں کے خلاف کاروائی سے گریزاں۔

تفصیلات کے مطابق تحصیل پنڈدادنخان کے نواحی گاؤں وگھ میں گزشتہ کئی سالوں سے اپنے مختلف ناموں کے ساتھ انسانی جانوں سے کھیل رہا ہے عطائی ڈاکٹر شکیل کبھی اپنا نام شکیل بتاتا ہے اور کبھی عاصم کچھ روز پہلے جب محمد طفیل عطائی شکیل کے پاس گیا تو اس نے غلط ٹیکہ لگا دیا جس سے محمد طفیل کی حالت غیر ہوگئی۔

ورثا نے احتجاج کرتے ہوئے انکوائری کے لیے تھانہ جلالپو ر شریف میں درخواست دی متاثرہ شخص طفیل کا کہنا ہے کہ تفتیشی افسر سب انسپکٹر اسلم کنڈل جعلی ڈاکٹر شکیل سے ساز باز کر رہا ہے اور مبینہ رشوت وصول کرتے ہوئے جعلی ڈاکٹر کی حمایت کر رہا ہے شکیل ہر بات پر جھوٹا ثابت ہونے پر بھی اسلم کنڈل ہمیں ڈراتا دھمکاتا رہا، حیران کن انکشاف تو اس وقت ہوا جب گزشتہ کئی سالوں سے وگھ میں رہائش پذیر شکیل نامی جعلی ڈاکٹر نے کہا میرا نام تو عاصم ہے۔

ذرائع کے مطابق تفتیشی افسر اسلم کنڈل نے جو نئی درخواست لکھ کر رکھی ہے اس میں اس نے اپنا نام زمان لکھوایا ہے جبکہ جعلی ڈاکٹر کو پہلے بھی کئی بار جرمانہ ہوا محمد شکیل احمد کے نام سے کلنیک بھی سیل کیا گیا لیکن انتظامیہ کی عدم دلچسپی اور بے حسی کے باعث یہ بندہ نام بدل بدل کر موت کا دھندہ کر رہا ہے انکوائری کے دوران موصوف کا قومی شناختی کارڈ منگوایا جائے اور مکمل تحقیق کروائی جائی کہ اصل میں یہ ہے کون؟۔

شکیل کا شناختی کارڈ پولیس کے سامنے ہونے سے بہت سے انکشافات سامنے آئیں گے، ڈی پی او جہلم غیر جانبدار انکوئری کروائیں حقائق سامنے آنے پر ساز باز کرنے والے پولیس ملازم اور جعلی ڈاکٹر کے خلاف قانون کے مطابق سخت سے سخت کاروائی کریں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.