پڑی درویزہ

سابق کالج ٹیچنگ انٹرنز کی طرف سے صوبائی وزیر برائے ہائر ایجوکیشن کو مبارک باد کا پہلا ٹویٹ

پڑی درویزہ: سابق کالج ٹیچنگ انٹرنز کی طرف سے صوبائی وزیر برائے ہائر ایجوکیشن کو مبارک باد کاپہلا ٹویٹ ۔ 9سال سے ٹھوکریں کھانے والے اساتذہ نے ملازمت کی مستقلی کا ہدف بھی صوبائی وزیر کو دے دیا ۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب کے پبلک سیکٹر کالجوں میں9سال سے جاری کالج ٹیچنگ انٹرنز پروگرام کی تحریک مستقلی ملازمت کے مرکزی کردار سابق کالج ٹیچنگ انٹرن پروفیسر افتخار محمود نے صوبائی وزیر برائے ہائر ایجوکیشن یاسر ہمایوں سرفراز کے نام اپنے پہلے ٹویٹ میں اعلیٰ تعلیم کی صوبائی وزارت کا عہدہ سنبھالنے پر مبارک دی ہے اور ساتھ ہی یہ اطلاع بھی کر دی کہ صوبہ پنجاب بھر میں دور دراز کے کالجوں میں گزشتہ نو سال سے کالج اساتذہ کی خالی اسامیوں پر عارضی اساتذہ کا ایک پروگرام کالج ٹیچنگ انٹرن کے نام سے جاری ہے ہر تعلیمی سیشن کے لیے یہ ماسٹر ڈگری ہولڈر مرد و خواتین بھرتی کیے جاتے ہیں اور سیشن کے اختتام پر فارغ کر دیے جاتے ہیں ۔

نئے تعلیمی سیشن کے آغاز پر تدریسی تجربہ کو زیر غور تک نہیں لیا جاتا بلکہ نئے پوسٹ گریجوئیٹ جن کے نمبر زیادہ ہوتے ہیں کو ان کے تجربہ پر ترجیح دے دی جاتی ہے جو نا انصافی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔سابق حکومت جو خدمت کے نعروں کی نذر ہو گئی نے اس سارے عرصے میں ان تجربہ کار کالج اساتذہ کو مستقل کرنے کی کوئی کاوش تک نہ کی جس کی وجہ سے یہ لوگ زائد العمر بھی ہوچکے ہیں۔

آج یہ لوگ انصاف کے طالب ہیں اور ٹویٹ میں یہ بات بطور ہدف صوبائی وزیر برائے ہائر ایجوکیشن یاسر سرفراز کو دی گئی ہے کہ وہ ان تجربہ کار کالج اساتذہ کے تدریسی تجربہ کی بنیاد پر مستقل کرنے کے اقدامات کر کے اعلیٰ تعلیم کے میدان میںمنصفانہ انقلاب کے سفر کا آغاز کر سکتے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button