پوٹھوہار سیاحت کا مرکز بنے گا،جرم اور سیاست کو الگ کرنا پڑے گا، فواد چوہدری

0

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی گاڑی کا انجن سیزہوچکا ہے،پیٹرول ڈالیں یا ڈیزل ان کی گاڑی چلنے والی نہیں، نیب کی زد میں وہ لوگ آرہے ہیں جنہوں نے پاکستان پر حکومت کی اور عوام کے ساتھ مذاق کیا،نیب کی کارروائیوں کا تعلق سیاست سے نہیں ہے یہ کارروائیاں جاری رہیں گی،جرم اور سیاست کو الگ کرنا پڑے گا۔

وہ جمعرات کو میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیاحت باقی ممالک سے زیادہ بڑی اور وسیع ہے،مستقبل میں پاکستان سیاحت سے بڑا زرمبادلہ کمائے گا،ملک کو لوٹنے والوں کو چھوڑنے کی رائے سے عوام اتفاق نہیں کرتے،عوام نے عمران خان کو اسی لئے ووٹ دیا کہ کرپٹ اور ملک کو لوٹنے والوں کا احتساب کیا جائے،ہمیں کسی کو جیلوں میں رکھنے کا شوق نہیں ہے،پاکستان کا پیسہ واپس کردیں تو جیل نہیں جانا پڑے گا۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے مولانا فضل الرحمان کی آصف علی زرداری اور نواز شریف سے ملاقاتوں کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ مولانا فضل الرحمان کی فلم نہیں چل رہی اور ان کی گاڑی کا انجن بھی سیز ہوگیا ہے وہ اس میں پیٹرول ڈالیں یا ڈیزل ڈالیں ان کی گاڑی اب چلنے والی نہیں ہے،مولانا فضل الرحمان کی باتوں اور سیاست میں جان نہیں ہے،اس میں ہمارے فکر کی کوئی بات نہیں ہے۔

اپوزیشن پر مقدمات کے اندراج سے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نیب کی زد میں وہ لوگ آرہے ہیں جنہوں نے پاکستان پر حکومت کی اور عوام کے ساتھ مذاق کیا،1947سے 2008تک ملک کے مجموعی قرضے 37ارب ڈالر تھے،ان قرضے میں اسلام آباد،منگلا ڈیم،تربیلا ڈیم،پاک فوج کی بیسیزبنائی گئیں اور ملکی معیشت کی تشکیل نو کی گئی،2008سے 2018تک قرصے میں اربوں ڈالر کا اضافہ ہوا،سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ یہ پیسہ کہاں گیا،نیب میں جو لوگ کیسز کا سامنا کررہے ہیں، انہوں نے ہی پاکستان کا پیسہ لوٹا یا پاکستان کا پیسہ منی لانڈرنگ کے ذریعے باہر بھجوایا،نیب کی کارروائیوں کا تعلق سیاست سے نہیں ہے یہ کارروائیاں جاری رہیں گی اور یہ بھی اہم ہے کہ جرم اور سیاست کو الگ کرنا پڑے گا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ملک کو لوٹنے والوں کو چھوڑنے کی رائے سے عوام اتفاق نہیں کرتے،عوام نے عمران خان کو اسی لئے ووٹ دیا کہ کرپٹ اور ملک کو لوٹنے والوں کا احتساب کیا جائے،ہمیں کسی کو جیلوں میں رکھنے کا شوق نہیں ہے،پاکستان کا پیسہ واپس کردیں تو انھیں جیل نہیں جانا پڑے گا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی ویزہ پالیسی میں تبدیلی سے ملک میں جہاں سیاحت کو فروغ ملے گا وہی ملک کی معیشت بھی مستحکم ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ پوٹھوہار تاریخی اہمیت کا حامل علاقہ ہے جو اسلام آباد سے چند کلومیٹر کے فاصلے پر ہے،یہ علاقہ سیاحت کا مرکز بنے گا، قلعہ روہتاس اور جہلم جشن بہاراں میلے کا انعقاد بھی اسی تناظر میں ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملائیشیا کی سیاحت پانی پر ہے وہ 20بلین،ترکی 40بلین ڈالر کما رہا ہے لیکن پاکستان میں مذہبی سیاحت،پہاڑی سیاحت،پانی کی سیاحت کے علاوہ 4 مذاہب کا عروج بھی ہمارے علاقوں میں ہی ہے،ہماری سیاحت باقی ممالک سے زیادہ بڑی اور وسیع ہے،مستقبل میں پاکستان سیاحت سے بڑا زرمبادلہ کمائے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.