کھیوڑہاہم خبریں

للِہ کو بھی یونین کونسل سے اپ گریڈ کر کے ٹاؤن کمیٹی کا درجہ دیا جائے۔ عابد اشرف، افتخار احمد شہزاد

کھیوڑہ: پنجاب بھر میں 30ہزار تک آبادی والے حلقہ کو ٹاؤن کمیٹی کا درجہ دینے کی منظوری پر ہم وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار، سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی اور وزیر بلدیات راجہ بشارت کا بھرپور شکریہ ادا کرتے ہیں اور کھیوڑہ کی عوام کو ٹاؤن کمیٹی بننے پر مبارک باد پیش کرتے ہیں، ہم وزیر اعلی پنجاب اور وزیر بلدیات سے بھرپور مطالبہ کرتے ہیں کہ للِہ کے ساتھ یونین کونسل کندوال، ٹوبہ لگا کر للِہ کو بھی یونین کونسل سے اپ گریڈ کر کے ٹاؤن کمیٹی کا درجہ دیا جائے۔

ان خیالات کا اظہار چوہدری عابد اشرف جوتانہ سابق تحصیل ناظم و امیدوار ایم این اے اور راجہ افتخار احمد شہزاد سابق تحصیل ناظم و تحصیل صدر پی ٹی آئی پنڈدادنخان نے جہلم اپڈیٹس سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے بلدیاتی نظام میں ترامیم کرتے ہوئے نوٹیفکیشن جاری کیا تھا کہ 50ہزار کی آبادی والے حلقہ کو ٹاؤن کمیٹی بنایا جائے گا اور 50ہزار سے کم آبادی والے حلقہ کو یونین کونسل میں تبدیل کر دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پورے پنجاب میں 149 ٹاؤن کا سٹیٹس تبدیل کر کے یونین کونسل بنا دیا تھا جس کی وجہ سے بہت سے حلقوں پر اثرات پڑے تھے جس میں ہمارا کھیوڑہ شہر بھی شامل تھا وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار، سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی اور وزیر بلدیات راجہ بشارت نے خصوصی طور پر دلچسپی لیتے ہوئے ترامیم میں تبدیلی کی اور نیا نوٹیفکیشن جاری کیا کہ پورے پنجاب میں 50ہزار سے کم کر کے 30ہزار آبادی والے حلقہ کو ٹاؤن کمیٹی کا درجہ دینے کی منظوری دی گئی جس سے پنجاب بھر میں بہت سے حلقوں کا دوبارہ سٹیٹس بحال ہو کر ٹاؤن کمیٹی میں تبدیل کر دیا گیا ٹاؤن کمیٹی بننے والے حلقے خود کفیل ہونگے اور اس طرح تعمیر وترقی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار، سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی اور وزیر بلدیات راجہ بشارت سے بھرپور مطالبہ کرتے ہیں کہ تحصیل پنڈدادنخان پسماندہ تحصیلوں میں سے پہلے نمبر پر ہے اور تحصیل پنڈدادنخان کی عوام کی بہتری کے لیے للِہ یونین کونسل کے ساتھ ملحقہ یونین کونسل کندوال اور یونین ٹوبہ کی آبادی لگا کر للِہ کو بھی ٹاؤن کمیٹی کا درجہ دلوائیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button