خلوص دل سے اللہ کریم کے احکامات پر عمل پیرا ہونا ہی شکر ہے۔ امیر عبدالقدیر اعوان

0

سوہاوہ: جہاں حق نہیں ہوتا ،وہاں نا حق ہو تا ہے ۔قرآن کریم تمام انسانیت کے لیے نازل فرمایا گیا ہے اب یہ فیصلہ انسان نے کرنا ہے کہ شکر کی راہ اختیار کرتا ہے یا نا شکری کی۔

ان خیالات کا اظہار شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ امیر عبدالقدیر اعوان نے روحانی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ اپنے رزق کو دیکھیں اپنی کمائی کو چیک کریں کہ کہیں اس میں حرام تو نہیں کیا یہ رزق جائز وسائل سے کما یاجارہا ہے یا اس میں ناجائز وسائل بھی شامل ہیں۔عبادات کا حاصل یہ ہے کہ بندہ کا اپنے رب سے تعلق گہرا ہوتا چلا جاتا ہے جب اللہ کریم سے تعلق نصیب ہوتا ہے پھر اس کا لحاظ بھی بندے کے اندر آجاتا ہے جو اس کو بے حیائی اور برائی سے روکنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہر انسان کے کردار سے معاشرے میں اس کے اثرات مرتب ہوتے ہیںاگر کردار اچھا ہے نیک ہے تو معاشرے میں بہتری آتی ہے اگر کردار منفی ہو تو معاشرہ میں بھی برائی آتی ہے جب معاشرے میں برائی زیادہ ہو جاتی ہے پھر اس معاشرے کے اثرات کردار پر اثر انداز ہوتے ہیں اس طرح معاشرے کی بہتری کے لیے افراد کے کردار کا بہتر ہونا بہت ضروری ہے ۔اللہ کریم ہمیں صحیح شعور عطا فرمائے ۔آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا فرمائی ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.