جہلماہم خبریں

عوام کی جائز شکایات سن کر ان کو حل کرنا ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ ڈی پی او شاکر حسین داوڑ

جہلم: شاکر حسین داوڑ نے کہا کہ عوام کی جائز شکایات سن کر ان کو حل کر نا ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے جس کو ہم آئی جی پنجاب انعام غنی کے احکامات پر پورا کر رہے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شاکر حسین داوڑ نے انچارج پولیس کمپلینٹ سیل SI عبدالغفور بٹ کی موجودگی میں دیا۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس ہر روز 35سے 50 سائلین اپنی شکایات لے کر آتے ہیں جبکہ زیادہ تر شکایات وہ ہوتی ہیں جن کے مقدمات جائیداد کے ضمن میں سول عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں کی شکایات اس طرح ہوتی ہیں کہ وہ بیرون ممالک مقیم ہیں اور ان کی جائیداد پر ان کے رشتہ داروں نے قبضے کیے ہوتے ہیں اور وہ ان کو واپس نہیں کرتے جس کیلئے اوورسیزشکایات سیل کے ذریعے ڈسٹرکٹ ریونیوکمیٹی میں یہ معاملات رکھ کر انہیں حل کروا دیا جاتا ہے

ڈی پی او جہلم نے کہاکہ سائلین کیلئے میرا دفتر ہر وقت کھلا ہوتا ہے جس کا جب بھی جی چاہے دفتری اوقات میں رابطہ کر سکتے ہیں جبکہ اس بارے میں انچارج شکایت سیل کو سختی سے ہدایت کی گئی ہے کہ تمام شکایت کنندگان کو احترام دے کر ان کی شکایات کو سنا جائے اور اس ضمن میں ایک مختصر بریف قانون کے مطابق بنا کر مجھے بتایا جائے تا کہ ان کو بروقت انصاف کی فراہمی یقینی ہو۔

انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ جھوٹی درخواستیں دینے کا عمل زیادہ ہوتا ہے جبکہ حقائق پر مبنی درخواستیں اور شکایات بہت کم ہوتی ہیں جن کو فوری طور پر ریلیف ملتا ہے۔

شاکر حسین داوڑ نے کہا کہ کوئی بھی درخواست دینے سے پہلے سائل کو سوچ لینا چاہیے کہ ہم نے تمام معاملات پوری تحقیق کرنے کے بعد حل کرنے ہوتے ہیں اس لیے جھوٹی درخواستیں دینے سے گریز کرنا چاہیے اس سے نا صرف ہمارا بلکہ ہمارے سٹاف کا وقت ضائع ہوتا ہے اور اصل سائلین بھی پریشان ہوتے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button