دینہ

دینہ میں موٹر سائیکلوں کی قیمتوں میں بھی غیر معمولی اضافہ، موٹر سائیکلیں بھی شہریوں کی پہنچ سے دور ہو گئیں

دینہ میں موٹر سائیکلوں کی قیمتوں میں بھی غیر معمولی اضافہ ، موٹر سائیکلیں بھی شہریوں کی پہنچ سے دور ہو گئیں ،موٹر سائیکلوں قیمتوں میں روز بروز اضافے نے خریداروں کے ساتھ ساتھ ڈیلرز کو بھی پریشانی میں مبتلا کر دیا ۔ متوسط اورعام طبقے کی شاہی سواری موٹرسائیکل بھی مسلسل مہنگائی کی زد میں آگئی۔
گزشتہ ایک ماہ کے دوران موٹرسائیکل کی قیمتوں میں تین سے پانچ ہزار روپے تک اضافہ ۔مارکیٹ میں 70 سی سی موٹر سائیکل 75 ہزار اور125 سی سی کی قیمت 1 لاکھ25 ہزار تک پہنچ چکی ہے۔نئی موٹر سائیکل کے خریداروں کو بڑھتے ہوئے نرخوں نے چکرا کر رکھ دیا ہے۔ خریداروں کا کہنا ہے کہ اب پرانی موٹر سائیکلوں پر ہی گزارہ کرنا پڑے گا۔
ایک شہری نے ’’جہلم اپڈیٹس ‘‘سے گفتگو میں کہا کہ وہ نئی موٹرسائیکل لینے آیا تھا مگر قیمت میری پہنچ سے دور ہوگئی ہے۔ اب پرانی موٹر سائیکلیں فروخت کرنے والوں سے پرانی موٹرسائیکل خرید کر گزارہ کرنا پڑیگا۔ خریداروں کی طرح موٹر سائیکل ڈیلرز بھی بڑھتی ہوئی مہنگائی کے سبب بہت پریشان ہیں۔
ڈیلرز کا کہنا ہے کہ گزشتہ چند ماہ میں ان کا کاروبار 20 سے30 فیصد کم ہو گیا ہے۔ موٹر سائیکل ڈیلرز نے بتایا کہ جو بھی گاہک آتا ہے وہ قیمت سن کر واپس لوٹ جاتا ہے۔ ہم کیا کریں ہمارے کاروبار آہستہ آہستہ تباہی کی طرف جارہے ہیں مگر حکومت ہے کہ اس طرف دھیان ہی نہیں دے رہی۔غریب کی سواری کہلانے والی موٹربائیک کی بڑھتی قیمتوں نے شہریوں کو مشکلات میں ڈال دیا ہے۔
شہریوں نے ’’جہلم اپڈیٹس ‘‘کی توسط سے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ مہنگائی کنٹرول کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے تاکہ کارروباری افراد کے گھر کا چولہا بجھنے سے بچ سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button