جہلم شہر و گردونواح میں مضر صحت مصنوعی دودھ فروخت کرنے والی درجنوں دکانیں کھل گئیں

0

جہلم: شہر و گردونواح میں مضر صحت مصنوعی دودھ فروخت کرنے والی درجنوں دکانیں کھل گئیں، کیمیکلز ، پاؤڈر ، آئل ، کھاد سے تیار مضر صحت دود ھ کی فروخت سر عام جاری ، شہری کیمیکلز سے تیار ہونے والے دودھ کے استعمال سے مختلف بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے۔ شہریوں نے ڈسٹرکٹ فوڈ اتھارٹی سے کارروائی کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر و گردونواح کے مختلف علاقوں میں مضر صحت مصنوعی دودھ تیار کرکے فروخت کرنے کی درجنوں دکانیں کھل گئیں ہیں ان دکانوں میں روزانہ کھاد، آئل ، واشنگ پاؤڈر اور دیگر کیمیکلز سے تیار ہونے والا سینکڑوں لیٹر دودھ فروخت کیا جارہاہے جس کے استعمال سے شہری خاص کر بچے مختلف موذی امراض کا شکار ہونے لگے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ان دکانداروں نے ناقص و غیر معیاری دودھ فروخت کرکے راتوں رات کروڑ پتی بننے کے خواب دیکھنے شروع کر رکھے ہیں۔ دوسری جانب محکمہ صحت کے ذمہ داران ناقص و غیر معیاری دودھ فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف کارروائی کرنے کی بجائے تحفظ فراہم کرتے دکھائی دیتے ہیں جس کی وجہ سے شہری مختلف موذی امراض میں مبتلا ہو رہے ہیں ، اسی وجہ سے شہر میں ہیپاٹائٹس کی شرح میں خطرناک حد تک اضافہ ہوچکا ہے۔

شہری، سماجی ، مذہبی ، رفاعی ، فلاحی تنظیموں کے عمائدین نے ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی ، ڈسٹرکٹ فوڈاتھارٹی سے کارروائی کا مطالبہ کیاہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.