جہلم

حکومتی بجٹ کے بعد تاجروں کا بجٹ، ٹیکس نہ لگنے والی اشیاء کی قیمتوں کو بھی ڈبل کر دیا

جہلم: حکومتی بجٹ کے بعد تاجروں کا بجٹ، ٹیکس نہ لگنے والی اشیاء کی قیمتوں کو بھی ڈبل کر دیا، من مانے ریٹس مقرر، شہریوں کو لوٹنے والوں کے خلاف ضلعی حکومت بالکل خاموش، ریٹ لسٹ نہ چیکنگ ، متوسط طبقہ بھکاری بننے پر مجبور ۔
جہلم شہر میں حکومتی بجٹ کے بعد لوٹ مار کا بازار گرم کر دیا گیا ہے اور شہر کے تقریبا تمام ہی تاجروں ، دوکانداروں نے اپنے اپنے بجٹ بنا کر روزمرہ کی استعمال کی تمام اشیا ء کو انتہائی مہنگا کردیا ہے۔
یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ جن چیزوں پر حکومت کی جانب سے ٹیکس میں اضافہ نہیں کیا گیا وہ بھی تاجروں نے اپنے بجٹ میں شامل کرکے من مانے ریٹ مقرر کر دئیے ہیں جس کی وجہ سے متوسط طبقہ کے لوگ حقیقی معنوں میں بھوکے مرنے پر مجبور ہو چکے ہیں آٹا ، دال ، چاول ، سبزیوں تک ہر چیز پر بجٹ کے نام پر من مانے ریٹس اور ہر دوکان پر مختلف ریٹس مقرر ہیں۔
ضلعی حکومت کی جانب سے نہ کوئی پرائس لسٹ جاری کی گئی ہے نہ ہی کوئی پرائس کنٹرول کا سسٹم ہے ضلعی انتظامیہ بس وقت گزارو پالیسی کے تحت روزانہ چند نام نہاد میٹنگز کرکے گھروں کو روانہ ہو جاتی ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button