جہلم

خسرے کے خلاف 12 روزہ قومی مہم 15 اکتوبر تا 27 اکتوبر تک جاری رہے گی۔ ڈاکٹر وسیم اقبال

جہلم: ملک بھر کی طرح ضلع جہلم میں خسرے کے خلاف 12 روزہ قومی مہم 15 اکتوبر تا 27 اکتوبر تک جاری رہے گی۔ اس مہم کے دوران 6 ماہ سے لے کر پانچ سال تک کے بچوں کو خسرے سے بچاؤ کی ویکسین لگائی جائے گی۔

ان خیالات کا اظہار سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر وسیم اقبال نے اپنے دفتر میں دوران پریس کانفرنس الیکٹرونک و پرنٹ میڈیا کے نمائندوں کو پریس بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس مہم کے دوران ملک بھر میں 30 ملین سے زائد بچوں کو خسرہ سے بچاؤ کی ویکسین دی جائے گی۔ اس مہم میں عالمی ادارہ صحت اور بچوں کے تحفظ اور بہبود کے لئے اقوام متحدہ کا ادارہ یونیسف پاکستان کے ساتھ تعاون کر رہا ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ سال 2018 میں خسرہ کے مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کے پیش نظر محکمہ صحت نے خسرہ جیسے موذی مرض کے خلاف مہم چلانے کا فیصلہ کیا ہے یہ مہم 27 اکتوبر تک جاری رہے گی۔ اس دوران محکمہ صحت جہلم کی ٹیمیں ہر گلی محلہ اور سکول میں جا کر اور مراکز صحت پر بیٹھ کر 06 ماہ سے لے کر7 سات سال تک کے تمام بچوں کو خسرہ سے بچاو کے ٹیکے لگائیں گی۔

اس موقع پر ڈاکٹر مظہر حیات نے کہا کہ خسرہ کی بیماری کی علامات آنکھیں سرخ بخار اور کھانسی ہے، پاکستان میں ہر سال پانچ سو بچے خسرہ کی بیماری کی وجہ سے لقمہ اجل بنتے ہیں، یہ بیماری پرہجوم مقامات سکولوں مارکیٹ اور بازار میں تیزی سے پھیلتی ہے ،پریس کانفرنس میں جہلم کے صحافیوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button