پنڈدادنخاناہم خبریں

جلالپورشریف میں مسافر بس کو اوباش لڑکوں نے روک کر کنڈیکٹر کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا

جلالپورشریف سے لاہور جانے والی بس نمبریBSC-824کو پنڈی سیدپور کے قریب روک کراوباش لڑکوں کی غنڈہ گردی، کنڈیکٹر کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

تفصیلات کے مطابق جلالپورشریف سے صبح 7:30پرلاہور جانے کے نکلی تو پنڈی سیدپور کے قریب سات موٹرسائیکلوں پر سوار تقریباً پندرہ کس اوباش لڑکوں نے موٹر سائیکلیں گاڑی کے آگے کر کے گاڑی کو رکنے کا اشارہ کیا تاہم ڈرائیور نے گاڑی مجبوراً روکنا پڑی اور گاڑی کے رکتے ہی مذکورہ افراد نے گاڑی کے کنڈیکٹر محمد فیصل خان ولد انورخان کو گریبان سے پکڑ کر گاڑی سے باہر کھینچ لیا۔

محمد فیصل خان نے صحافیوں سے گفتگو کر تے ہوئے بتایا کہ ان غنڈوں نے مجھے وجہ بتائے بغیر لاتوں اور تھپڑوں سے مارنا شروع کردیا۔ اس دوران میری قمیض پھٹ گئی اور گاڑی کی پیشگی رقم دس ہزارروپے کے علاوہ میری ذاتی رقم تقریباً سات ہزار چار سو روپے گرگئے۔ میرا شور وواویلا سن کر ڈرائیور کے علاوہ گاڑی میں سوار دیگر افراد نے میری بامشکل میری جان بچائی تاہم موقع پر لوگوں کی تعدا میں اضافہ ہوتا دیکھتے ہی مذکورہ افراد سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے فرار ہوگئے۔

محمد فیصل خان نے کہا کہ میں نے تھانہ جلالپورشریف میں درخواست دے دی ہے جس پرتھا نہ جلالپورشریف کے ایس ایچ او نے فوری کارروائی کی یقین دہانی کروائی اور میری درخواست پر عمل درآمد شروع کر دیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button