ضلع جہلم کے متعدد سرکاری تعلیمی ادارے چار دیواریوں سے محروم

0

جہلم: ضلع جہلم کے بعض سرکاری تعلیمی ادارے چار دیواریوں سے محروم ، طلبہ اور اساتذہ کی زندگیوںکو شدید خطرات لاحق، سانحہ آرمی پبلک سکول پیش آنے کے بعد موجودہ حکومت نے ہنگامی بنیادوں پر تعلیمی اداروں میں طلبہ اور اساتذہ کی زندگیوں کو دہشت گرد کارروائیوں سے محفوظ بنانے کے لئے بلند و بانگ دعوے گئے مگر ضلع جہلم کے بعض تعلیمی ادارے آج بھی چار دیواری سمیت دیگر سہولیات سے محروم ہیں ، طلبہ ء کے والدین نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف اور محکمہ تعلیم کے ارباب اختیار سے نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ضلع جہلم کے سکولوں نے ہمیشہ نصابی اور غیرنصابی سرگرمیوں میں شاندارنتائج پیش کئے مگر ضلع کی یہ اہم تعلیمی درسگاہیں چار دیواری سمیت دیگر سہولیات سے محروم چلی آرہی ہیں کلاس رومز کم ہونے کیوجہ سے طلبہ و طالبات کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں۔

واضح رہے کہ ضلع جہلم سے بڑے بڑے ناموں والے افسران و سیاسی ممبران منتخب ہو کر وطن کے اعلیٰ عہدوں اورقومی و صوبائی اسمبلیوں میں پہنچے مگر تعلیمی درسگاہوں کے بنیادی مسائل ان کی نظروں سے اوجھل ہونا لمحہ فکریہ سے کم نہیں ہے ، ملک میں دہشت گردی کی لہر کے پیش نظر حکومت نے تعلیمی اداروں میں طلبہ اور اساتذہ کی زندگیوں کو محفوظ بنانے کیلئے جنگی بنیادوں پر اقدامات بھی اٹھائے مگر ضلع جہلم کے بعض تعلیمی اداروں کی چار دیواری کے بغیر ہونا انتہائی مایوس کن ہے۔

اگر جائزہ لیا جائے تو ضلع بھر کے بعض مضافاتی علاقوں میں موجود سرکاری تعلیمی ادارے تاحال بنیادی سہولیات سے محروم چلے آرہے ہیں ، موسم کی شدت اور زندگیوں کو شدید خطرات لاحق ہونے کے باوجود طلبہ کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں۔

طلبہ کے والدین سمیت شہری تنظیموں کے عہدیداروں نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف اور محکمہ تعلیم کے ارباب اختیا ر سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.