دینہاہم خبریں

جہلم تا سوہاوہ جی ٹی روڈ موت کی وادی میں تبدیل، روزانہ متعدد افراد جان کی بازی ہارنے لگے

دینہ: جہلم تا سوہاوہ جی ٹی روڈ موت کی وادی میں تبدیل ، روزانہ متعدد افراد جان کی بازی ہارنے لگے ، موٹر وے پولیس کے ذمہ داران ناکوں تک محدود، آبادی والے علاقوں میں تیز رفتاری کی حد مقرر نہ کروا سکے،شہریوں کا آئی جی موٹر وے پولیس سے نوٹس لینے کامطالبہ۔

تفصیلات موٹر وے پولیس کی نااہلی و عدم دلچسپی کے باعث جہلم تا سوہاوہ جی ٹی روڈ پر تیز رفتاری کے باعث روزانہ کی بنیاد پر مختلف حادثات پیش آنے کی وجہ سے ہلاکتوں میں اضافہ ہو رہاہے ، موٹر وے پولیس کے ذمہ داران شہری آبادیوں کے قریب قانون پر عملدرآمد کروانے کی بجائے ویران جگہوں پر ناکے لگا کر ٹارگٹ پورا کرتے دکھائی دیتے ہیں۔

اس حوالے سے شہریوں کا کہنا ہے کہ جہلم تا سوہاوہ جی ٹی روڈ پر موٹروے پولیس کے ذمہ داران ڈیوٹیاں دینے کی بجائے ویران جگہوں پر کھڑے ہو کر ناکے لگانے کو ترجیح دیتے ہیں جس کی وجہ سے آبادیوں والے علاقوں میں تیز رفتار گاڑیاں سڑک عبور کرنے والے شہریوں کو روندتی ہوئی غائب ہو جاتی ہیں شہریوں کا کہنا ہے کہ حادثات کی بنیادی شہری علاقوں میں رفتار کی مقررہ حد سے تجاوز کرنا ہے۔

شہریوں نے انسپکٹر جنرل موٹر وے پولیس سے مطالبہ کیا ہے کہ جہلم تا سوہاوہ جی ٹی روڈ پر فرض شناس ، ایماندار موٹر وے پولیس کے افسران و عملے کو تعینات کیا جائے تاکہ شہریوں کو حادثات سے محفوظ بنایا جا سکے۔

متعلقہ مضامین

ایک تبصرہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button