جہلم

کھادوں کی شدید قلت ، خواری زمینداروں کا مقدر، گندم کی پیداوار متاثر ہونے کا خطرہ

جہلم: زرعی کھادوں کی شدید قلت ، خواری زمینداروں کا مقدر ، گندم کی فی ایکٹر پیداوار متاثر ہونے کا خطرہ پیدا ہوگیا، متاثرہ کسانوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب اور ضلعی انتظامیہ کے تمام تر دعوے کاوشیں مبینہ طور پر ریت کی دیوار ثابت ہورہے ہیں ، زرعی کھادوں کا بحران مسلسل جاری رہنے اور بلیک میں فروخت کی وجہ سے روزانہ کی بنیاد پر چھوٹے زمینداروں اور کسانوں کی پریشانیوں میں غیر معمولی اضافہ ہو چکا ہے۔

کھاد کی 1 بوری حاصل کرنے کی غرض سے زمینداروں اور کسانوں کو کئی کئی گھنٹوں تک لائنوں میں کھڑے ہو کر انتظار کرنا پڑتا ہے جبکہ بڑے بااثر زمیندار چوردروازوں سے مطلوبہ مقدار کے مطابق زرعی کھادوں کا ٹارگٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں ، تمام تر حالات و واقعات کا علم ہونے کے باوجود حکومتی مشینری اور انتظامیہ کی رٹ تا حال سوالیہ نشان بنی ہوئی ہے۔

کسانوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کیاہے کہ ضلعی انتظامیہ کو کھادیں ، بیج ، زرعی ادویات فراہم کرنے کا پابند بنایا جائے تاکہ کسان جوکہ زراعت کے شعبے میں ریڑھ کی ہڈی کا کردار ادا کر رہے ہیں کو زوال پذیر ہونے سے بچایا جا سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button