جہلم

ضلع جہلم میں کورونا وائرس پر محنت کر کے قابو پا لیا گیا ہے۔ ڈاکٹر عدنان نجب

جہلم: ضلع جہلم میں کوڈ 19کے وائرس موذی مرض پر محنت کر کے قابو پا لیا گیا ہے۔

ان خیالات کاا ظہار فوکل پرسن کوڈ 19چیسٹ سپیشلسٹ ڈاکٹر عدنان نجب نے کوڈ 19کے حوالے سے مریضوں کے بارے میں تفصیلات بتاتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ کوڈ 19کی تیسری خوفناک لہر میں جہلم میں اس پر ضلعی انتظامیہ ڈپٹی کمشنر جہلم راؤ پرویز اختر، سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر وسیم اقبال، ڈی او ایچ ڈاکٹر مظہر حیات، میڈیکل سپریٹنڈنٹ ڈاکٹر شعیب حسین کیانی کی بہتر حکمت عملی سے نا صرف اس پر عمل ہوا ہے بلکہ ہزاروں مریض کوڈ 19سے صحت یاب ہو کر اپنے گھروں کو جا چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج بھی اللہ کے فضل و کرم سے ہمارے پاس کوڈ وارڈ میں صرف 14مریض داخل ہیں جن میں 5مریضوں کی رپورٹ مثبت جبکہ باقی مریضوں کے ٹیسٹ لیکر بھجوائے گئے ہیں انہوں نے کہا کہ خدا کے فضل و کرم سے مریضوں کو صحت عامہ کی سہولیات دیکر انہیں صحتیاب کرنا نہ صرف نیکی ہے بلکہ عبادت بھی ہے

انہوں نے کہا کہ جہلم میں ڈپٹی کمشنر راؤ پرویز اختر سی ای او ہیلتھ اور ایم ایس کی بہتر پالیسی کی وجہ سے آج تک آکسیجن وافر مقدار میں موجود رہی ہے بلکہ پچھلے دنوں ملک میں لگائے گئے دھرنے اور ٹریفک جام سے ڈپٹی کمشنر جہلم راؤ پرویز اختر نے کوڈ وارڈ میں آکسیجن کی فراہمی کو یقینی بنا کر ثابت کیا ہے کہ عوام کی خدمت کرنے کا جذبہ ان میں موجود ہے۔

اس موقع پر میڈیکل سپریٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہلم ڈاکٹر شعیب حسین کیانی نے بتایا کہ ہر اس ادارے کی خوش قسمتی ہوتی ہے جہاں آپکو اچھے مسیحا ملے جبکہ ہماری خوش قسمتی ہے ڈاکٹر عدنان نجب فوکل پرسن کوڈ 19اور ان کے تمام میڈیکل آفیسر اور وارڈ سٹاف نے جس طرح ایمانداری سے مریضوں کو صحت عامہ کی سہولیات فراہم کر کے صحتیابی کی طرف گامزن کیا ہے وہ قابل تحسین ہے جبکہ ڈپٹی کمشنر جہلم راؤ پرویز اختر، سی ای او ڈاکٹر وسیم اقبال کا روزانہ کی بنیاد پر کوڈ کے مریضوں کی صحتیابی کے لیے لمحہ بہ لمحہ باخبررہنا بھی احساس ذمہ داری کی ایک بہترین مثال ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ہسپتال میں ہر ماہر امراض کے پاس روزانہ بارہ سے پندرہ سو مریض آتے ہیں جن کو میں اپنے دفتر میں بیٹھ کر چیک کرتا ہوں جبکہ اگر کسی مریض کو کوئی شکایت ہوتی ہے تو میں اس کے ساتھ خود جا کر اس ماہر امراض کو چیک کرواتا ہوں حالانکہ کوڈ 19وائرس کی وجہ سے مریضوں کی تعداد کم ہوئی ہے لیکن پھر بھی جو مریض یہاں آتے ہیں ان کو بھر پور صحت عامہ کی سہولیات فراہم کیا جاتی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ہمارے پاس تمام ماہر امراض ڈاکٹر کے ساتھ ساتھ ادویات بھی موجود ہیں جو مریضوں کو فراہم کی جاتی ہیں اور انشاء اللہ یہ سلسلہ جاری رہے گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button