جہلم

نئی آبادی کھرالہ کولپور میں سیوریج کا نظام نہ ہونے سے ہزاروں مکین رل گئے

جہلم: نئی آبادی کھرالہ کولپور میں سیوریج کا نظام نہ ہونے سے ہزاروں مکین رل گئے، گھروں میں پانی جمع، گلیوں میں سیوریج کے دریا ، آئے روزمکینوں کے لڑائی جھگڑے معمول بن گئے، اعلی حکام سے نوٹس کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق نئی آبادی کھرالہ میں سینکڑوں گھروں کی تعمیر کے باوجود مقامی سیاسی نمائندوں نے یہاں سیوریج لائن ڈالنے کی زحمت نہ کی جس کی وجہ سے آئے روز یہاں لڑائی جھگڑے معمول بن گئے ہیں آبادی کے اندر کی تمام گلیاں سیوریج کے دریا بن چکی ہیں اور گنداپانی نکاسی آب کا مناسب انتظام نہ ہونے سے مکینوں کے گھروں میں مستقل کھڑا ہے اس علاقے میں آنے جانے کا کوئی راستہ باقی نہیں رہا اور اہل علاقہ کو خوشی غمی کی صور ت میں کئی کئی فٹ گندے پانی سے گزرنا پڑتا ہے۔

اس علاقے سے منتخب چیئرمین راجہ کامران حیات اور سابق ایم پی اے مہر محمد فیاض یہاں کے لوگوں کو درجنوں مرتبہ جھوٹے دلاسے دے چکے ہیں لیکن عملی کام کوئی نہیں ہورہا۔ اہل علاقہ نے بتایا کہ جھوٹے وعدے کرنے والے اب پھر متحرک ہیں اور ووٹ مانگنے گھر گھر جاکر لوگوں کو پھر الو بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

اہل علاقہ نے بتایا کہ جب تک ہمارا سیوریج کا مسئلہ حل نہیں ہوتا کسی امیدوار کی حمایت نہیں کریں گے گندے پانی کی وجہ سے بچے بیمار ہو رہے ہیں۔ اہل علاقہ نے ڈی سی جہلم سے اپیل کی ہے کہ وہ اس علاقہ کا دورہ کریں اور صورتحال کا ذاتی مشاہدہ کر کے ہمارے مسائل حل کروائیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button