جہلم

ضلع جہلم میں دکانداروں نے اشیائے خورودنوش کی قیمتوں میں 10 سے 15 فیصد اضافہ کر دیا

جہلم: ضلعی انتظامیہ اور دیگر اداروں کی توجہ کورونا وائرس سے بچاو کیلئے کئے جانیوالے حفاظتی اقدامات کی جانب مبذول ، تاجروں اور دکانداروں نے شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔

دکانداروں نے شہر سمیت ضلع بھر میں اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں 10/15 فیصد اضافہ کر دیا ہے ، چینی کی قیمت میں بتدریج اضافہ ، اسی طرح گھی،مرچ ،مصالحہ جات ،آلو پیاز، دالیں ،چاول ،سبزیات اور پھلوں سمیت تمام اشیا کے نرخوں کو پر لگ گئے ہیں، انتظامیہ نے تاجروں کی سرپرستی کرتے ہوئے چینی کا کوئی نرخ مقرر نہیں کیا جس کی وجہ سے تاجر من مرضی کے نرخ وصول کرکے چینی فروخت کر رہے ہیں۔

پیاز 24 روپے فی کلو فروخت کرنے کی بجائے 30 روپے فی کلو ،آلو 30 روپے کی بجائے 45 روپے فی کلو، لہسن 150 کی بجائے 170 روپے فی کلو،گوشت مرغ 370 کی بجائے 390 روپے ،گھی اور آئل کے نرخ مقرر کرنے کی بجائے انتظامیہ نے شہریوں کو تاجروں کے رحم و کرم پر چھوڑ رکھا ہے۔

روٹی کی سرکاری قیمت 7 روپے اور نان کی سرکاری قیمت10 روپے مقرر ہے، نان بائی روٹی 10 روپے اور نان 15 روپے کے حساب سے فروخت کرکے شہریوں کی جیبوں کا صفایا کرنے میں مصروف ہیں جبکہ انتظامیہ فوٹو سیشن کے ذریعے سب اچھا ہے کا راگ آلاپ رہی ہے۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ ضلع جہلم میں فرض شناس ایماندار افسران کو تعینات کیا جائے تاکہ شہری حکومت کے مقررکردہ نرخوں کے مطابق اشیاء خوردونوش خرید کر استعمال کر سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button