جہلم

پی ٹی سی ایل کے بوڑھے ضعیف العمر پینشنرز، بیوائیں 12 سال سے پنشن میں اضافے سے محروم

جہلم: پی ٹی سی ایل کے بوڑھے ضعیف العمر40 ہزار سے زائد پینشنرز، بیوائیں 12 سال سے پنشن میں اضافے سے محروم ، چیف جسٹس سپریم کورٹ ، وزیراعظم پاکستان ،صدرِ پاکستان سے پنشن میں اضافہ بحال کروانے کا مطالبہ۔

پی ٹی سی ایل کے ریٹائرڈ ملازمین جن کی تعداد تقریباً 40 ہزار کے قریب ہے جن میں بوڑھے ، ضعیف العمر پنشنرز جن میں ہزاروں بیوائیں بھی شامل ہیں آج12 سال سے پنشنوں میں اضافہ نہ ہونے کیوجہ سے کسمپرسی کی زندگیاں گزارنے پر مجبور ہیں۔

پی ٹی سی ایل کے ریٹائرڈ ملازمین آج بھی پنشن میں اضافے کی امید لگائے بیٹھے ہیں، مگر پنشن میں اضافہ بحال نہیں کیا جا رہا، پی ٹی سی ایل کے ریٹائرڈ ملازمین کی پنشنوں میں تقریباً 50 فیصد التصلات کی درخواست پر 2010 میں غیرقانونی طور پر پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت نے محنت کشوں کی پنشن میں کمی کر دی تھی جو ایک غیرقانونی اقدام تھا۔

ہائی کورٹ سپریم کورٹ کی معزز عدالتوں کے تمام فیصلے پی ٹی سی ایل پنشنرز کے حق میں آچکے ہیں مگر ان فیصلوں پر عمل درآمد نہیں ہو رہا، آج 12 سال سے زائد کا عرصہ ہو چکا ہے لیکن پی ٹی سی ایل کے ریٹائرڈ ملازمین کی پنشنز میں اضافہ بحال نہیں کیا گیا۔

چیف جسٹس سپریم کورٹ وزیراعظم پاکستان ،صدرِ پاکستان سے 40ہزار بوڑھے ضعیف العمر پنشنرز جن میں ہزاروں بیوائیں بھی شامل ہیں اپیل کرتے ہیں، اعلیٰ عدلیہ کے فیصلوں پر عملدرآمد کرکے پی ٹی سی ایل کے پنشنز میں روکا ہوا اضافہ بحال کیا جائے کیونکہ نصب پنشن میں غریب بوڑھے پیشنرز اور بیوائیوں کا گزار بسر کسی صورت ممکن نہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button