پرائس کنٹرول کمیٹیاں غیر موثر، منڈیوں میں خرید و فروخت کا نظام تباہ، عام عوام پریشان

0

پرائس کنٹرول کمیٹیاں غیر موثر ، منڈیوں میں خریدوفروخت کا نظام تباہ،عام عوام غیر یقینی کی صورت حال سے دوچار، تحصیل انتظامیہ اشیاء خردونوش کی قیمتیں کنٹرول کرنے میں ناکام،کارکردگی فوٹو سیشن تک محدود، وزیر اعلی خود نوٹس لیں۔

کھیوڑہ سمیت تحصیل بھر میں منافع خوروں نے انتظا میہ کی سستی کے سبب انت مچا رکھی ہے ، سبزی ،گوشت سمیت بنیادی استعمال کی عام اشیاء کی قیمتیں عام عوام کی دسترس سے دور ہو گئی ہیں، حکومت کی جانب سے ہونے والی مہنگائی کے ساتھ مقامی پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے ذمہ داران کی مبینہ غفلت سے لوگ شدید ذہنی کوفت کا شکار ہیں، بازاروں میں کھانے پینے کی اشیاء کے من مانے ریٹ دھڑلے سے وصول کیے جا رہے ہیں غریب عوام حکومتی مہنگائی کے ساتھ ساتھ منافع خوروں کی جانب سے خود ساختہ مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں۔

شہر کھیوڑہ جوکہ صنعتی علاقہ بھی ہے اور یہاں کی زیادہ تر آبادی مزدور پیشہ ہے اور مزدور محنت مزدوری کر کے اپنے بچوں کا پیٹ پالتے ہیں۔ پنڈدادنخان اور کھیوڑہ جڑواں شہر ہونے کے باوجود اشیا خورد و نوش کی قیمتوں میں واضع فرق ہے۔ اس واضع فرق کی وجہ سے ہر روز ہزاروں خرید داروں کو رکشوں پر دھکے کھانے پڑتے ہیں مقامی انتظامیہ کی غفلت اور لاپرواہی کے باعث گائے کا گوشت، مٹن، چکن سبزیاں ،دالیں، پھل و فروٹ وغیرہ فروخت کرنے والے دوکاندار مرضی کے ریٹ وصول کرتے ہیں ۔

وینٹری ڈاکٹر نے اپنے دفتر تک محدود رہ کر قصابوں کو کھلی چھٹی دی ہوئی ہے کس کی وجہ سے لاغر اور بیمار مادہ جانور کے گوشت کی زائد قیمت پر فروخت دھڑلے سے جاری ہے۔ اشیا ضروریات غریب کی پہنچ سے دور ہو چکی ہیں پرائس کنٹرول کمیٹی اور تحصیل انتظامیہ کی غفلت لاپرواہی سے منافع خوروں کا کاروبار عروج پر ہے۔

عوامی سماجی حلقوں نے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر خود ساختہ مہنگائی کرنے والے منافع خوروں کے خلاف مستقل کارروائی کی جائے اورغریب عوام کو ریلیف دلایا جائے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.