جہلم

جہلم کی سڑکوں کو مرمت کرنے کی بجائے بجری اور مٹی ڈال کر شہریوں کو مبتلا کرنے کی کوششیں جاری

جہلم: ضلعی انتظامیہ نے شہر کی سڑکوں کو مرمت کرنے کی بجائے بجری اور مٹی ڈال کر شہریوں کو دمے اور آشوب چشم کی بیماریوں میں مبتلا کرنے کی کوششیں جاری ، سڑکوں پر سے گزرنے والے شہریوں کے چہروں پر کئی کئی انچ مٹی جمنے لگی۔ شہری سراپا احتجاج ، وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق ضلعی انتظامیہ نے اندرون شہر کی سڑکیں مرمت کرنے کی بجائے گڑھے بند کرنے کے لئے بجری اور مٹی ڈال کر شہریوں کی مشکلات میں غیر معمولی اضافہ کر دیا ہے۔

اس حوالے سے شہریوں نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ انتظامیہ کی عدم توجہی کے باعث چک دولت کریش پلانٹ سے بجری اور خاکہ لانے والے ڈمپرز شہر کی سڑکوں کی تہس نہس کررہے ہیں ، آر ٹی اے سیکرٹری ، موٹر وہیکل ایگزامینر ، ٹریفک پولیس سمیت قانون نافذ کرنے والے ادارے خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہے ہیں۔

انتظامیہ نے شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر بڑے بڑے بورڈ نصب کررکھے ہیں جس پر اندرو ن شہر بھاری گاڑیوں کے داخلے پر عائد پابندی کی عبارات درج ہیں انتظامیہ کی سرپرستی کی وجہ سے ڈمپر مالکان دن اور رات کے اوقات میں کانوائی کی شکل میں ڈمپرز شہر کی سڑکوں پر مٹر گشت کرتے دکھائی دیتے ہیں جس کی وجہ سے اوورلوڈ ڈمپرز شہر کی سڑکوں میں بننے والے گڑھوں کے بنیادی کردار ہیں۔

شہریوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر کی سڑکوں کی مرمت کے لئے فنڈز کا اجراء کیا جائے اور انتظامیہ کو اندرون شہر سے گزرنے والے ڈمپرز پر پابندی عائد کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں تاکہ اندرون شہر کی سڑکوں کو ٹوٹ پھوٹ سے بچایا جا سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button