چاروں تحصیلوں میں کیمیکل ملی چائے کی پتی مرچوں اور مصالحہ جات کی فروخت کا دھندہ عروج پر پہنچ گیا

0

جہلم: اندرون شہر سمیت چاروں تحصیلوں میں کیمیکل ملی چائے کی پتی مرچوں اور مصالحہ جات کی فروخت کا دھندہ عروج پر پہنچ گیا۔ چائے کی پتی ، مرچوں اور مصالحہ جات سمیت کیمیکل ملا دودھ انسانی زندگیوں کیلئے انتہائی خطرناک ثابت ہو رہا ہے۔

شہریوں سمیت بزرگ شہریوںاور معصوم بچوں کی بڑی تعداد کیمیکل ملا دودھ ، مصالحہ جات، مرچیں اور چائے کی پتی وغیرہ کے استعمال سے آنتوں ، معدے کی بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں ۔ ڈسٹرکٹ فوڈ اتھارٹی کی جانب سے مختلف ملاوٹ شدہ اشیا ء کی فروخت کیخلاف مستقل بنیادوں پر کارروائی کا نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے جس کی وجہ سے بیماریوں میں اضافہ ہو رہا ہے ۔

سیاسی اثر و رسوخ رکھنے والے بڑے بڑے ملاوٹ مافیا کے سرغنہ حکومتی شکنجے سے محض اس لئے بچے ہوئے ہیں کہ مافیا کی پشت پناہی سیاسی افرا د سمیت متعلقہ اداروں کے افسران و اہلکار کر رہے جس کی وجہ سے مافیا بڑی دیدہ دلیری سے ملاوٹ والی اشیاء سر عام بازاروں میں فروخت کرنے میں مصروف ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے ملاوٹ والی اشیاء فروخت کرنیوالے افراد کو جب تک نشان عبرت نہیں بنایا جائیگا اسوقت تک ملاوٹ والی اشیاء خودرونوش کی فروخت کو روکنا ممکن نہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.