جہلم

جہلم شہر و گردونواح میں دودھ دہی کے سرکاری نرخ نامے صرف آویزاں کرنے تک محدود

جہلم: شہر و گردونواح میں دودھ دہی کے سرکاری نرخ نامے صرف آویزاں کرنے تک محدود ، دکاندار نرخ نامے پر عملدرآمد کرنے پر انکاری، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے بھی آنکھیں بند کر لیں۔
تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ملحقہ آبادیوں میں دودھ دہی کے دکانداروں نے بڑے بڑے گتوں پردودھ فی کلو 80 روپے ، دہی فی کلو 90 روپے کے حساب سے نرخ نامے آویزاں کر رکھے ہیں، دودھ 90روپے سے 100 روپے دہی 90 روپے کی بجائے 100 روپے فی کلو کے حساب سے فروخت کر رہے ہیں۔
شہریوں کا کہنا ہے کہ اگر دکانداروں کو نرخ نامے کے حساب سے دودھ دہی فروخت کرنے کے بارے کہا جائے تو دکاندار تلخ کلامی کے ساتھ ساتھ لڑائی جھگڑے سے بھی گریز نہیں کرتے ، دکانداروں کا کہنا ہے کہ نرخ نامے سرکارکے ہیں اس نرخ پر دودھ دہی فروخت نہیں کرسکتے۔
انہوں نے کہا کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کے کہنے پر نرخ نامے آویزاں کر رکھے ہیں ،پر اس پر عملدرآمدکرنا مشکل ہے کیونکہ دودھ اس قیمت پر نہیں ملتا، مجسٹریٹس کا کہنا ہے کہ صرف نرخ نامے نظر آنے چاہیے ، فروخت جس ریٹ پر مرضی کریں اگر نرخ نامے نظر نہ آئیں تو مجسٹریٹس جرمانے کر دیتے ہیں ۔
شہریوں نے دکانداروں اور پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کے دوہرے معیار پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر پرائس کنٹرول مجسٹریٹس نے نرخ ناموں پر عملدرآمد نہیں کروانا تو حکومتی پالیسی بھی سوالیہ نشان ہے۔
شہریوں نے کمشنر راولپنڈی ، ڈپٹی کمشنر جہلم سے نوٹس لینے اور سرکاری نرخ ناموں پر دکانداروں کو عملدرآمد کروانے کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button