جہلم

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہلم میں سہولیات کا فقدان، مریض اور لواحقین کو مشکلات کا سامنا

جہلم: ضلع کے سب سے بڑے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں سہولیات کا فقدان ، ایمرجنسی کے باہر سے مدد گار کا غائب رہنا معمول بن گیاجبکہ ہسپتال میں سٹریچروں اورویل چیئرز سمیت دیگر سہولیات بھی ناپید ، متعدد وارڈز کے اے سی خراب ، مریضوں اور انکے تیماداروں کا براحال، ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کے ورثاء کا وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار ، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر راشد یاسمین سے اصلاح و احوال کا مطالبہ۔

ذرائع کے مطابق ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں زیرعلاج مریضوںکے لواحقین نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ گرمیوں کا آغاز ہو چکا ہے ، متعدد وارڈز میں ایئر کنڈیشنز یا تو خراب پڑے ہیں یا ابھی چالو نہیں کئے گئے ، جس کیوجہ سے ہسپتال کی وارڈز میں داخل مریضوں اور ان کے تیماداروں کو مشکلات کا سامنا کرناپڑ رہاہے۔

مریضوں کے لواحقین کا کہنا ہے کہ ایمرجنسی اور آئی سی یو وارڈ کے باہر مدد گار کاؤنٹر قائم کر دیا گیا ہے جبکہ مدد گار نام کی کوئی چیز موجود نہیں یہاں تک کہ آپریشن تھیٹر سے مریضوں کو وارڈز میں منتقل کرنے کے لئے بھی وارڈز سرونٹس موجود نہیں جس کیوجہ سے مختلف اقسام کے ٹیسٹ سی ٹی اسکین ،ایکسرے وغیرہ کروانے کے لئے مزید مریضوں کے لواحقین کی ڈیوٹیاں لگا دی جاتیں ہیں حالانکہ ڈیوٹی روسٹر میں روزانہ کی بنیاد پر وارڈز سرونٹس کی ڈیوٹیاں بھی موجود ہوتی ہیں۔

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہلم میں آنے والے مریضوں کے لواحقین نے وزیراعلیٰ پنجاب، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر راشد یاسمین سے نوٹس لینے اور اصلاح و احوال کا کا مطالبہ کیاہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button