دینہاہم خبریں

ضلع جہلم کے حقوق کا محافظ کون؟۔ حکومت کا سول ہسپتال کو پرائیویٹ سیکٹر میں لانے کا فیصلہ

دینہ: ضلع جہلم کے حقوق کا محافظ کون ہو گا۔ ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال جہلم کو پرائیویٹ سیکٹر میں لایا جا رہا ہے۔ عمل درآمد سے کی عوام کو ناقابل تلافی نقصان ہو گا۔

تفصیلات کے مطابق یہ خبر گشت کر رہی ہے کہ حکومت پنجاب نے جہلم ہسپتال کو پرائیویٹ سیکٹر میں لانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس فیصلے سے غریب اور متوسط طبقہ شدیدطور پر متاثر ہو گا۔

ذرائع کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ بائیس دیگر اضلاع کو فروری اور مارچ سے پرائیویٹ سیکٹر کے ماتحت کر دیا جائے گاجبکہ ڈسٹر کٹ ہیلتھ اتھارٹی کا چیئرمین لگانے کیلئے پنجاب حکومت نے فہرست مکمل کر لی ہے ۔

دیکھنا یہ ہے کہ ایم این اے اور ایم پی اے پہلے ہی عوامی مزاج نہیں رکھتے اوراجتماہی کاموں کی طرف توجہ نہیں دیتے اُن اضلاع کے ہسپتالوں کو کوپرائیویٹ سیکٹر کے انتظامات کو کیسے چلا پائیںگے، لہٰذا ریاست کی بنیادی ذمہ داری تعلیم اور صحت ہے۔اگر تعلیم اور صحت کو بھی پررائیویٹ سیکٹر میں لانا ہے تو حکومت کی کارگزاری قابل تشویش ہے۔

سیاسی سماجی مذہبی حلقوں نے حکومت پنجاب سے اپیل کی ہے کہ اگر اپنے فیصلے پر نظر ثانی نہ کی تو 2018ء کے الیکشن میں مسلم لیگ (ن) کو کوئی فرد شکست سے نہیں پچا سکتا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button