جہلماہم خبریں

جہلم میں معمولی تلخ کلامی پر نوجوان نے ساتھی پر گولیوں کی بوچھاڑ کردی، نوجوان ہسپتال منتقل

جہلم: تھانہ صدر کے علاقہ ڈھوک وہاب دین میں معمولی تلخ کلامی پر نوجوان نے ساتھی پر گولیوں کی بوچھاڑ کردی، زخمی نوجوان کو فوری طبی امداد کے لئے سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا،حالت خطرے سے باہر ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈھوک وہاب دین کے رہائشی حارث نواز ولد محمد نواز نے پولیس کو بیان دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ بی اے کا طالبعلم ہوں ساڑھے 11 بجے دن اکیڈمی سے ٹیوشن پڑھ کر گھر آرہا تھا کہ گلی میں حسنین شاہ ولد غلام حیدر ساکن ڈھوک وہاب دین جو کہ میرا پڑوسی ہے کھڑا تھا کے اشارہ کرنے پر میں رک گیا اور اسے ساتھ بٹھا لیا۔

مخالف سمت کی طرف سے محمد ارسلان عرف شانی ولد راجہ خوشحال احمد ساکن جناح ٹاؤن جو کہ موٹر سائیکل پر سوار تھا جس نے میرے پاس آکر موٹر سائیکل کھڑی کی اور نیچے اتر کر پسٹل 9MM نکال کر مجھے جان سے مار دینے کی نیت سے سیدھا فائر کیا جو کہ مجھے بائیں ٹانگ پر لگا جس سے زخمی ہو کر میں زمین پر گر پڑا۔

زخمی نے بتایا کہ میرے اور حسنین شاہ کے شور واویلا کرنے پر محمد وسیم عصمت واہلہ آگئے جنہوں نے منت سماجت کرکے میر ی جان بخشی کروائی ، ہم نے ارسلان عرف شانی کو پکڑنے کی کوشش کی مگر وہ دھکے دیتے ہوئے اور ہوائی فائرنگ کرتے ہوئے بھاگ جانے میں کامیاب ہو گیا۔

پولیس نے 324 ت پ کے تحت مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button