جہلم

کشمیری بھائیوں کے ساتھ تحریک آزادی کے لئے سردھڑ کی بازی لگا دیں گے۔ چوہدری فرخ الطاف

جہلم: وہ دن دور نہیں جب مودی کے ظلم کا بازار ہمیشہ کے لئے بند ہوجائے گا۔پاکستانیوں کا کشمیریوں سے رشتہ کلمہ طیبہ کا ہے ، پاکستانی عوام کے دل کشمیریوں کیساتھ دھڑکتے ہیں ، کشمیر ہماری شہ رگ ہے ، اسے دشمن سے آزاد کروائے بغیر آرام سے نہیں بیٹھیں گے، کشمیری بھائیوں کے ساتھ تحریک آزادی کے لئے سردھڑ کی بازی لگا دیں گے۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما ممبر قومی اسمبلی چوہدری فرخ الطاف نے گزشتہ روز یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے اخبار نویسوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ 5 فروری کو یوم یکجہتی کشمیر پوری دنیاء میں منایا جاتا ہے ، یہ روایت وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ مستحکم ہوتی جارہی ہے ، اس دن کو منانے کا آغاز تقسیم کشمیر سے قبل ہی 1932 میں ہوگیاتھا لیکن یہ سلسلہ ٹوٹتااور جڑتا رہا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان بننے کے بعد بھی کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا جاتا رہا، تاہم اس کے لئے کوئی خاص دن مقرر نہیں تھا، ہمیں فخر ہے کہ ہمارے آباؤ اجداد نے برصغیر میں تحریک آذادی میں جان و مال کی قربانیاں دیں ، خاص طور پر قیام پاکستان میں ہمارے خاندان اورمجاہدین کی لازوال قربانیاں تاریخ آزادی کا سنہرا باب ہیں جنہیں کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

چوہدری فرخ الطاف نے کہا کہ میں یاد دلانا چاہتا ہوں کہ قائد اعظم محمد علی جناح نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا، اس کا تحفظ ہر پاکستانی کا فرض ہے کیونکہ اسی میں پاکستان کی بقاء ہے ، 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر منانے کا اہم مقصد یہی ہے کہ ہم اپنے کشمیری بھائیوں کو یاد دلائیں کہ ہم ان کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں ، ہم ان کی آزادی کے لئے سر دھڑ کی بازی لگا دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ بھار ت کے ظلم و بربریت کو دنیاء کے سامنے لانے کے لئے یہ ثابت کرنا ضروری ہے کہ ہم ایک ہیں اور کشمیر ہمارا ہے ، ہمارا صرف ایک ہی نعرہ ہے ، کشمیر بنے کا پاکستا ن ، دفاع وطن ، کشمیر کی آزادی اور مظلوم کشمیری عوام کو ان کے حقوق دلانے کی اس تاریخی تحریک میں افواج پاکستان نے بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے اور ہم نے ہزاروں جوانوں کی قربانیاں پیش کیں ہیں ، میں ان عظیم قربانیوں پر افواج پاکستان کو بھی سلا م پیش کرتا ہوں ۔

اس موقع پر ممبر صوبائی اسمبلی چوہدری ظفر اقبال، ڈاکٹر فضل الحق (فضلی)، چوہدری وجاہت وسیم بھی موجود تھے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button