جہلم

جہلم کے مضافاتی علاقے آوانہ میں پپیتے کی کاشت شروع ہوگئی

جہلم کے مضافاتی علاقے آوانہ میں پپیتے کی کاشت شروع ہوگئی، شہری نے ضلع جہلم میں پہلا پپیتے کا فارم قائم کرکے بڑی تعداد میں پپیتے کا پھل کاشت کرنا شروع کررکھا ہے، طبعی ماہرین کے نزدیک پپیتے کا پھل شوگر، بلڈ پریشر، دل کی بیماریوں اور کینسر سے بچاو سمیت بہت سی بیماریوں کے لیے انتہائی کارآمد ہے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم کے نواحی علاقہ آوانہ میں چوہدری ظہیر الٰہی نے 6کنال رقبے پر سب سے پہلا پپیتے کا فارم قائم کر کے اس فارم سے روزانہ کی بنیاد پر بھاری مقدار میں پپیتے کا پھل حاصل کرکے فروخت کے لیے منڈی پہنچا رہا ہے۔

ظہیر الٰہی کو سوشل میڈیا سے اس پھل کی افادیت کا پتہ چلا تواسے شوق پیدا ہوا اور اس نے پپیتا کی نایاب نسل ریڈ لیڈی پپیتا کاشت کرنا شروع کردیا جو کہ پاکستان میں بہت کم کاشت ہورہا ہے ظہیر الٰہی کے مطابق وہ اکیلا ہی اس باغ اور اس پر لگنے والے پھلوں کی نشونما اور دیکھ بھال کے لیے لگن سے سارے کام خود اکیلا ہی انجام دیتا ہے۔

طبعی ماہرین کے مطابق پپیتے کا پھل انسانی صحت کے لیے انتہائی کارآمد ہے، پپیتا خون کو صاف، آنکھوں کی بینائی، شوگر، بلڈ پریشر، معدہ اور کینسر سمیت بہت سی بیماریوں کا علاج ہے۔

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے میڈیکل اسپیشلسٹ ڈاکٹر فواد مجید چوہدری کا کہنا ہے کہ پپیتے کا پھل خوش ذائقہ ہونے کے ساتھ ساتھ نہ صرف انسانی صحت کے لیے مفید ہے بلکہ اسکی فارمنگ کرکے اچھی خاصی آمدن بھی حاصل کی جاسکتی ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button