جہلماہم خبریں

سوچی سمجھی سازش کے تحت نوابزادہ خاندان کی شہرت کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ عامر شہزاد

جہلم: نہ چوری کی نہ چوری کا سامان برآمد ہوا، بے بنیاد من گھڑت الزام عائد کرکے شہرت کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی، انشاء اللہ اپنی بے گناہی ثابت کریں گے۔

ان خیالات کا اظہار نوابزاہ خاندان کے پرسنل سیکرٹری عامر شہزاد نے اخبار نویسوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما ممبر قومی اسمبلی نوابزدہ اقبال مہدی (مرحوم) کے ساتھ اور ان کے صاحبزادے پاکستان مسلم لیگ(ن) کے مرکزی رہنما سا بق ممبر قومی اسمبلی نوابزدہ مطلوب مہدی کے ساتھ بطور پرسنل سیکرٹری خدمات سرانجام دے رہا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ تحصیل جہلم میں نوابزدہ خاندان کے جتنے زرعی اور دیگر معاملات ہیں ان کی نگرانی بھی میں ہی کرتا ہوں، مورخہ یکم اپریل 2021 کو بجرم 379 ت پ ، 506 ت پ ، 109 ت پ کے تحت انور خان آفریدی نے میرے سمیت چار نامزد اور 4/5 نامعلوم افراد کے خلاف بے بنیاد جھوٹا مقدمہ تھانہ چوٹالہ میں درج کروایا جس کا حقیقت کے ساتھ دور دور تک کوئی واسطہ نہیں۔

عامر شہزاد نے کہا کہ میں جہلم آیا ہوا تھا اور واپسی پر نوابزادہ مطلوب مہدی کے مالکیتی ڈیرے پر گیا جہاں ایس ایچ او تھانہ چوٹالہ ملک آصف آگئے اور مجھے اپنے ساتھ تھانہ لے گئے جہاں انہوں نے رات گئے میرے اوپر بے بنیاد مقدمہ درج کیا جس کا حقیقت سے کوئی واسطہ نہیں۔

انہوں نے کہا کہ نہ تو ڈیرے پر کوئی سامان چوری کر رہا تھا اور نہ ہی ہمیں سامان چوری کرنے کی کوئی ضرورت ہے کیونکہ مذکورہ ڈیرہ نوابزادہ مطلوب مہدی ، نوابزادہ طالب مہدی کی مالکیت ہے ، پولیس نے میرا ایک روزہ ریمانڈ حاصل کیا جب کوئی چیز برآمد نہ ہوسکی تو اگلے دن معزز عدالت نے مجھے ضمانت پر رہا کر دیا۔

عامر شہزاد نے کہا کہ اگر میرے ساتھ مزید لوگ ہوتے تو یقینا پولیس انہیں بھی گرفتار کرتی یہ من گھڑت کہانی ہے اس کا حقیقت سے کوئی واسطہ نہیں۔ انشاء اللہ اس جھوٹے مقدمے سے بھی باعزت بری ہوں گے، سوچی سمجھی سازش کے تحت نوابزادہ خاندان کی شہرت کو نقصان پہنچانے کی غرض سے ہتھکنڈے استعمال کئے جارہے ہیں، مخالفین کو ناکامی کے سواء کچھ حاصل نہیں ہوگا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button