جہلم

ضلع جہلم میں جعلی و مضر صحت اشیاء کی فروخت عروج پر، شہری موذ ی بیماریوں میں مبتلا ہونے لگے

جہلم: ضلع بھر میں جعلی و مضر صحت اشیاء کی فروخت عروج پر شہری بالخصوس بچے موذ ی بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں،سماجی ، رفاعی ، فلاحی حلقوں کا پنجاب فوڈ اتھارٹی سے کارروائی کرنے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم ضلع بھر میں ملاوٹ شدہ مرچیں ، جعلی چائے کی پتی ، مصالحے جات ، دالیں ، دودھ دہی و دیگر اشیاء خوردونوش غیر معیاری مضر صحت اجزاء سے تیار کردہ نمکو ، پاپڑ چپس ،ٹافیاں ، املی ، چیونگم ، بسکٹس ، چورن جوسسز ، ٹاٹری اور دیگر اشیاء خوردونوش کی جگہ جگہ گلیوں محلوں کریانہ سٹوروں پر سرعام فروخت شروع ہے۔

ضلع بھر کی دکانوں میں زائد المعیاد اشیاء خوردونوش بھی فروخت ہو رہی ہیں ، جسکے باعث بڑوں کے ساتھ ساتھ بچے بھی مختلف موذی بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

شہریوں نے ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ جعلی و مضرصحت اشیاء خوردونوش فروخت کرنے اور شہری علاقوں میں منی فیکٹریاں لگانے والوں کے خلاف سختی سے از خود نوٹس لیتے ہوئے کارروائی کی جائے تاکہ شہر ی اور بچے مختلف بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button