جہلم میں ناقص اور ملاوٹ شدہ اشیاء خوردونوش استعمال کرنے سے خطرناک امراض میں مبتلاہونے لگے

0

جہلم: محکمہ فوڈ اتھارٹی کی کارروائیاں بے اثر، شہری ناقص اور ملاوٹ شدہ اشیاء خوردونوش استعمال کرنے سے خطرناک امراض میں مبتلا ہونے لگے ،شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم ڈسٹرکٹ فوڈ اتھارٹی کی تمام آپریشنل ٹیموں کی اپنے فرائض میں غفلت کیوجہ سے شہری ملاوٹ شدہ اور ناقص کھانے کھانے پر مجبور ہیں۔

سول لائن روڈ، راجہ بازار، چوک گنبد والی مسجد، مشین محلہ روڈ، روہتاس روڈ، جادہ روڈ، محمدی چوک ، قبرستان چوک ،کمیلا روڈ، پولیس لائن روڈ، کریم پورہ روڈسمیت جی ٹی روڈ دیگر مقامات پر جہاں مسافروں کی بہتات ہو اور شہر کے بارونق بازاروں میں قائم فوڈ پوائنٹ بنے ہوئے ہیں جو ملاوٹ کرکے فوڈ اتھارٹی کے قوانین کی دھجیاں بکھیرتے نظر آتے ہیں۔

ہوٹلوں پر کھانا تیار کرنے والے ملازمین کھلے جوتے گندے کپڑے پہنے حفاظتی ٹوپی کے بغیر کھانے تیار کرنے میں مگن دکھائی دیتے ہیں اور کھانوں میں استعمال ہونے والے تمام اجزاء ناقص اور کھلے برتنوں میں رکھ کر شہریوں کو کھلائے جاتے ہیں ، ہوٹل مالکان بڑی جرات و بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے بلا خوف و خطر شہریوں کو ناقص و غیر معیاری کھانے فروخت کرکے شہریوں کو موذی امراض میں مبتلا کررہے ہیں۔

شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ ہوٹلوں سمیت فوڈ پوائنٹس پر کام کرنے والے محنت کشوں کا ہفتہ وار میڈیکل چیک اپ کرنے کا پابند بنایا جائے تاکہ شہری بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.