جہلم

گاڑیوں پر نصب ایل ای ڈی لیزر لائٹس شہریوں کیلئے عذاب، حادثات روزانہ کا معمول بن گئے

جہلم: کاروں ، موٹر سائیکلوں پر نصب ایل ای ڈی لیزر لائٹس شہریوں کے لئے عذاب، حادثات روزانہ کا معمول بن گئے۔ شہری اور دیہی حلقوں میں شوقین افراد نے اپنی گاڑیوں، موٹر سائیکلوں، ٹریکٹروں اور رکشوں پر لیزر لائٹس لگوا کر شہریوں کی زندگیوں کو عذاب میں مبتلا کر رکھا ہے۔

رات کے وقت مذکورہ لائٹ جلنے سے حادثات کی شرح میں بھی خاطر خواہ اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے، لیرز لائٹس کی روشنی اس قدر زیادہ اور تیز ہوتی ہے کہ سامنے سے آنے والے ڈرائیورز کو کچھ نظر نہ آنے کے باعث حادثے کا امکان 100 فیصد بڑھ جاتا ہے۔

اس حوالے سے شہریوں کا کہنا ہے کہ لیزر لائٹس کی شدت اتنی زیادہ ہوتی ہے کہ رات کے وقت ایک بار آنکھوں میں پڑجائے تو نظر آنا ہی بند ہوجاتا ہے، اور ایسے حالات میں بے شمار حادثات بھی رونماء ہوچکے ہیں جس کیوجہ سے کئی قیمتی انسانی جانیں بھی ضائع ہو چکی ہیں۔

شہری اور عوامی حلقوں نے ڈی پی او جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے عناصر جو صرف اپنا شوق پورا کرنے کی خاطر شہریوں کی زندگیوں کو خطرے میں مبتلا کر رہے ہیں انکے خلاف اور ایل ای ڈی لیزر لائٹس فروخت کرنے والے دکانداروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے تاکہ حادثات میں کمی واقع ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

ایک تبصرہ

  1. بہت خوش آٸییند بات ہے کہ ان لا ٸیٹس پر پابندی لگاٸ جاۓ اور ساتھ ہی چنگ چی رکشا لوڈر پر بھی توجہ دیں کہ اکثر بغیر لاٸیٹ کے چلتے ہیں موٹر ساٸیکل اور چنگ چی میں صرف باڈی کا فرق ہے جو کہ رات کو واضع نہیں ھوتا اور حادثے کا موجب بنتا ہے اس لیے فرنٹ اور بیک ساٸیڈ ریفلیکٹر سٹکر لازمی قرار دیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button