جہلم

جہلم میں تجاوزات کے خلاف آپریشن شٹر خاتمہ مہم بن گیا، دوکانداروں کا شٹر اتار کر سڑکوں پر قبضہ

جہلم: تجاوزات کے خلاف آپریشن شٹر خاتمہ مہم بن گیا دوکانداروں نے شٹر اتار کر سڑکوں پر قبضہ برقرار رکھا، مین بازار، نیا بازار ، ریلوے روڈ، محمدی چوک میں تاحال دس دس فٹ سڑکیں قبضہ گروپوں کے پاس، بلدیہ حکام کا شٹر توڑنے پر زور، دوکانداروں نے ترپالوں سے عارضی شٹر بنالئے، شہریوں کا سڑکوں کو خالی کروانے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر میں گزشتہ ایک ہفتہ سے جاری تجاوزات خاتمہ مہم بری طرح ناکام ہو رہی ہے بلدیہ حکا م کی جانب سے آپریشن کے دوران آہنی شٹر اتارنے پر سارا زور لگادیا گیا ہے، البتہ سڑکوں پر رکھے سٹینڈ، سامان، بینچ وغیرہ کو ہٹانے کی ہرگز زحمت نہیں کی گئی جس کی وجہ سے سات روزہ آپریشن کے بعد بھی دوکانداروں نے سڑکوں پر قبضہ برقرار رکھا ہوا ہے ، شہر بھر میں ریڑھیاں ، ٹھیلے ، سامان پکوائی تاحال سڑکوں پر قبضہ برقرار رکھے ہوئے ہے جس کی وجہ سے آپریشن کے باوجود ٹریفک کی روانی میں بہتری نہیں آسکی اور شہر میں پیدل گزرنا بھی محال ہے۔

شہریوں کاکہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے تجاوزات ختم کرنے اور سڑکوں پرقابض مافیا کا سامان ضبط کرنے کے احکامات پر کوئی عمل درآمد نہیں ہورہا ، بلدیہ حکام صرف شٹر اتار رہے ہیں حالانکہ شٹر سڑکوں سے دس دس فٹ اوپر لگے ہیں جو بظاہر ٹریفک کی روانی میں کوئی مسئلہ نہیں کرتے، محمدی چوک، جادہ ، بلال ٹاون، ریلوے روڈ پر دوکانداروںنے سرئے عام سامان آدھی آدھی سڑک پر رکھا ہوا ہے اور اپنے دوکانوں کو خالی چھوڑکر باہر سامان رکھنا معمول بن چکا ہے۔

شہریوں نے وزیر بلدیات علیم خان، ڈی سی جہلم جہانزیب اعوان سے مطالبہ کیا ہے کہ سڑکوں کو خالی کروانے کیلئے قابض مافیا کے خلاف ایکشن لیا جائے ، دوسری طر ف دوکانداروں نے آہنی شٹر اتار کر ترپال سے عارضی چھت بنا لئے ہیں جو بلدیہ عملہ کے آنے پر ہٹا لئے جاتے ہیں اور ان کی واپسی پر دوبارہ لگا کرپرانی جگہ پر پھر قبضہ کر لیا جاتا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button