پڑی درویزہسوہاوہ

سوہاوہ کے علاقہ پڑی درویزہ میں 60 سال سے قائم واحد ڈسپنسری ایک دفعہ پھر یتیم ہو گئی

پڑی درویزہ میں 60سال سے قائم واحد کیپٹن عطا اللہ ڈسپنسری ڈسٹرکٹ کونسل سول ڈسپنسری ایک دفعہ پھر یتیم ہو گئی ۔ علاقہ کی 20ہزار سے زائد آبادی صحت کی سہولیات کے سلسلے میں بے یارو مدد گار، سی ای او ہیلتھ ضلع جہلم سے ایک دفعہ پھر شفقت کرنے کی عوامی درخواست۔

تفصیلات کے مطابق نواحی علاقہ پڑی درویزہ میں قائم واحد 60 سالہ کیپٹن عطا اللہ خان ڈسٹرکٹ کونسل سول ڈسپنسری کورونا وائرس کی تیسری لہر میں اضافے کے باعث عارضی طور پر تعینات 2ڈسپنسر ز میں سے صرف ایک ڈسپنسردوران ہفتہ دو دن کے لئے خدمات سر انجام دینے لگا جس کی وجہ سے ڈسپنسری ایک دفعہ پھر یتیم ہو گئی۔

ہر روز تقریباً 80 مریض بغیر دوا اور علاج کے واپس جانے پر مجبورہیں، علاقہ کی 20 ہزار آبادی صحت کی سہولیات کے سلسلے میں مکمل طور پر بے یارو مدد گار۔ بنیادی مرکز صحت پھلڑے سیداں اکثریتی آبادی کی پہنچ سے باہر ہے ۔

علاقہ کے معززین نے ایک تحریری درخواست میں چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی ضلع جہلم ڈاکٹر وسیم اقبال سے استدعا کی ہے کہ ڈسپنسری پڑی درویزہ کی موجودہ صورت حال پر سنجیدگی سے غور کیا جائے نیز اگر ممکن ہو تو بنیادی مرکز صحت پھلڑے سیداں سے ہی کوئی ڈسپنسردوران ہفتہ کم از کم چار دنوں کے لئے تعینات کر دیا جائے تا کہ علاقہ کی 20ہزار آبادی کی صحت کی چنداں سہولت دستیاب ہو سکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button