پنڈدادنخان

ایم ایس کی نااہلی، سول ہسپتال پنڈدادنخان میں مریضوں کے ساتھ ناروا سلوک معمول بن گیا

پنڈدادنخان: ایم ایس کی نااہلی، ٹی ایچ کیو ہسپتال پنڈدادنخان میں مریضوں کے ساتھ نارواسلوک معمول بن گیا ، سیڑھیوں سے گر کر زخمی ہونے والی بچی کے لواحقین کے ساتھ ایکسرے روم میں اہلکار اورڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر کا ہتک آمیز رویہ، لواحقین نے سرکاری کمپلین نمبر پر شکایت درج کروا دی۔

تفصیلات کے مطابق ایم ایس THQپنڈدادنخان کی نااہلی کے باعث عملہ اور ڈاکٹرز نے ہسپتال آنے والے مریضوں کے ساتھ ہتک آمیز رویہ سے پیش آنا معمول بنا لیا۔

ذرائع کے مطابق سیڑھیوں سے گر کر زخمی ہونے والی بچی کو کھیوڑہ سےTHQپنڈدادنخان لے جایا گیالواحقین نے پریشانی کی حالت میں ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر کو بچی کاچیک اپ کرنے کا کہا جس پر ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر نے کہا کے ایکسرے روم بند ہے آپ لوگ کل آکر ایکسرے کروا لیں۔

ڈاکٹر کے ھیلے بہانے کرنے پر لواحقین نے جب CO جہلم اور DDHO سے رابطہ کرنے کی کوشش کی تو رابطہ نہ ہونے پر مجبور سرکاری کمپلین نمبر 080099000 پر شکایت درج کروا دی جس کے بعد متعلقہ بندہ ڈیوٹی پر آیا او ر بچی کے لواحقین سے ہتک آمیز وریہ سے پیش آنا شروع کر دیا۔

یاد رہے کہ THQپنڈدادنخان میں افسران کی مبینہ آشیرباد کے باعث اس طرح کے واقعات سامنے آتے رہتے ہیں جبکہ ہسپتال انتظامیہ افسران کی ملی بھگت سے سب اچھا کی رپورٹ دیتے ہیں۔

عوامی سماجی حلقوں نے THQپنڈدادنخان میں تعینات عملہ افسران کا مریضوں کے ساتھ نامناسب رویہ کے خلاف تشویش کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب سمیت اعلیٰ حکام سے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button