جہلماہم خبریں

ریلوے اسٹیشن جہلم پر جواء بازوں، منشیات اور جسم فروشوں کا مکروہ دھندہ سرے عام جاری

جہلم: ریلوے اسٹیشن پر انتظامیہ کی ناقص ایڈمنسٹریشن کے باعث جواء بازوں ، منشیات فروشوں ، جسم فروش خواتین وغیرہ کا مکروہ دھندہ سرے عام جاری۔ اندرون شہر رات کی تاریکی میں ڈکیتی ، راہزنی ، سٹریٹ کرائم کی وارداتوں میں غیر معمولی اضافہ ۔ پیار کے پیاسے لڑکے لڑکیوں نے 15 کے عقبی علاقے کو لوور پوائنٹ میں تبدیل کر لیا۔

تفصیلات کیمطابق جہلم ریلوے اسٹیشن کی انتظامیہ کی ناقص حکمت عملی و عدم دلچسپی کے باعث ریلوے اسٹیشن جرائم پیشہ عناصر کی آماجگاہ میں تبدیل ہو چکا ہے ۔ مسافر ٹرینوں میں کمی آنے کی وجہ سے جہلم ریلوے اسٹیشن کی رونقیں ماند پڑ چکی ہیں جس کی وجہ سے جہاں دن کے اوقات میں سینکڑوں کی تعداد میں مسافر چہل پہل کرتے دکھائی دیتے تھے ان کی جگہ جرائم پیشہ افراد کی ٹولیاں اپنے شکار ڈھوندتی دکھائی دیتی ہیں۔

ریلوے اسٹیشن پر موجود مسافر خانے لوور پوائنٹ میں تبدیل ہو چکے ہیں۔جہاں سارا دن آوارہ قسم کے لڑکے لڑکیاں ملاقاتیں کرتے اورمنشیات کے عادی افراد گرے پڑے دکھائی دیتے ہیں۔ ریلوے اسٹیشن کے اردگرد بدنام زمانہ جواریوں کی ٹولیاں جواء کھیلتے ،شرطیں لگاتے ناچتے کودتے ، واویلا کرتے دکھائی دیتے ہیں ۔

جنرل بس اسٹینڈ سے ریلوے اسٹیشن کی طرف جانے والے مسافروں کو رات کی تاریکی کافائدہ اٹھاتے ہوئے ریلوے کوارٹروں میں مقیم جرائم پیشہ افراد پیدل چلنے والوں کی تلاشی لیکر جیبیں صاف کر دیتے ہیں۔ جنرل بس اسٹینڈ تا جی ٹی ایس چوک پیدل جانے والے مرد ، خواتین اپنی قیمتی اشیاء ، نقدی سے محروم ہوجاتے ہیں۔

شہریوں نے وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سے مطالبہ کیا ہے کہ جہلم ریلوے سٹیشن کی رونقیں بحال کرنے کیلئے جہلم ریلوے اسٹیشن پر تمام ٹرینوں کا سٹاپ بحال کیا جائے ، تاکہ شہری ایک مرتبہ پھر ریلوے اسٹیشن پر پہنچ کر مسافر ٹرینوں پر سفر کرنے کو ترجیح دیں۔جبکہ جہلم ریلوے اسٹیشن پر سیکورٹی اہلکاروں کو تعینات کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں تاکہ جرائم پیشہ عناصر کا خاتمہ ممکن ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button