جہلم

سوئی گیس کی بدترین ظالمانہ لوڈ شیڈنگ اور پریشر میں کمی، ایل پی جی گیس فروخت کرنیوالے دکانداروں کی چاندی

جہلم: شہر و گردونواح میں سوئی گیس کی بدترین ظالمانہ لوڈ شیڈنگ اور پریشر میں کمی ، ایل پی جی گیس فروخت کرنیوالے دکانداروں کی چاندی ، دکانداروں نے من مرضی کے نرخ مقرر کرلئے ، سرکاری نرخ فی کلو 1 سو20 روپے نظر انداز جبکہ دکاندار وں نے فی کلو گیس 180 روپے فروخت کرکے لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے، ضلعی حکام نے آنکھیں بند کر لیں۔
تفصیلات کے مطابق حکومت نے ایل پی جی گیس کا فی کلو نرخ 120 روپے مقرر کر رکھا ہے ، مگر بااثر دکانداروں نے1 سو 70روپے سے لیکر ا1سو 80 روپے میں فروخت کرکے شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنا شروع کر رکھا ہے ، سوئی گیس کی لوڈ شیڈنگ اور کم پریشر کے باعث شہریوں کا دکانوں پر رش نظرآتا ہے۔
دکانداروں نے بدترین ظالمانہ لوڈشیڈنگ کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایل پی جی کے نرخوں میں خود ساختہ اضافہ کرکے مہنگائی کے پسے ہوئے شہریو ں کی کھال ادھیڑنا شروع کررکھی ہے ، شہر سمیت مختلف مقامات پر ایل پی جی فروخت کرنیوالے دکانداروں نے سستے داموں گیس خرید کر مہنگے داموںگیس فروخت کرنا شروع کررکھی ہے۔
یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ دکاندار سلنڈروں میں سے 1/2 کلو گیس نکال کر خالی سلنڈروں میں مائع گیس بھر کر وزن پورا کرتے ہوئے مہنگے داموں سلنڈروں کی فروخت شروع کررکھی ہے ۔ اس صورتحال پر ضلعی انتظامیہ نے مکمل لا تعلقی اختیار کر رکھی ہے جو کہ سوالیہ نشان ہے۔
شہریوں نے ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ نوٹس لیتے ہوئے مہنگی ایل پی جی فروخت کرنیوالے دکانداروں کے خلاف فوجداری مقدمات درج کروائے جائیں تاکہ محنت مزدور ی کرنے والے افرادکے گھروں کے چولہے ارزاں نرخوں سے جل سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button