دینہ

جنگلات کی تباہی نہ رک سکی، مجموعی طور پر اربوں ڈالرز کی قیمتی لکڑ چوری اڑن چھو

دینہ: جنگلات کی تباہی نہ رک سکی، مجموعی طور پر اربوں ڈالرز کی قیمتی لکڑ چوری اڑن چھو ، ضلع جہلم میں بھی فاریسٹ معاملات میںجنگل کا قانون ، چوروں سے یاریاں صدر پاکستان وزیر اعظم پاکستان چیف جسٹس آف سپریم کورٹ اور وزیر اعلیٰ پنجاب نوٹس لیں۔

تفصیلات کے مطابق اسلامی جمہوریہ پاکستان کرپشن خزانوں کو دیمک کی طرح چاٹ رہی ہے ، اگر باریک بین سروے کیا جائے تو یہ وطن جنگلات کی مد میں اپنے اندر بڑا خزانہ رکھتا ہے ، اور ماحول کے واسطے بھی درختوں کا وجود اہم ہے مگر افسوس امریہ ہے کہ پنجاب سمیت دیگر صوبوں میں بھی جنگلا ت کی بتاہی عام ہے۔

پنجاب کے متعدد علاقوں میں جہاں فاریسٹ سے قیمتی سر سبز جنگلات کی چوری عام ہے ، پرانے قدیمی درختوں کی لکڑ بھی قیمتی بن جاتی ہے مگر اکثر ٹمبر مافیا کے چور اور سرکاری جنگلات کے افسران و اہلکار قیمتی درختوں کو کنڈم اور دیمک ذدہ شو کر کے تباہی کراتے ہیں، اور سالانہ اربوں ڈالرز مالیت کے درخت صفحہ ہستی سے غائب ہو رہے ہیں، نہروں سڑکوں لائنوں اور سرکاری جنگلات میں ارد گرد تباہی کی جارہی ہے۔

ضلع جہلم میں بھی کرپشن اور لوٹ مار ہے ، غفلت کا بازار بھی گرم ہے تحصیل دینہ سوہاوہ تک بھی بااثر ٹمبر مافیا اور کرپٹ رشوت خود عملہ افسران دونوں ہاتھوں سے لوٹ مار کر رہے ہیں اور اسلامی وطن کے اہم خزانہ جنگلات کو فروخت کر کے دولت کما رہے ہیں ، لکڑ چوروں نے بھی حد کر اس کر دی ہے ، اور دیدہ دلیری سے سرکاری جنگلات کو اڑزن چھو کیا جا رہا ہے ، متعدد بار آگاہی مسلسل خبروں کی اشاعت کے باوجود کوئی شنید نہ ہے۔

اس وقت ڈومیلی و دیگر ریجن میں ٹمبر مافیا ٹرکوں ٹرالوں ٹرالیوں حتی کہ اونٹوں پر بھی مال لے کر جاتے ہیں، اورمرکزی لکڑ چوروں چوری کا مال سستے داموں خریدنے والوں کو پاکستانی سرکاری جنگلات کا مال فروخت کرتے کٹائی کرتے ہیں، پاکستان میں ٹمبر مافیا اور کرپٹ سرکاری ملازموں نے آنکھوں میں دھول جھونکنے کے واسطے قیمتی لکڑ کو کم مالیت شو کر کے فرضی چالان چٹوں کاروائیوں میں کمائی کر رہے ہیں۔

عوامی و سماجی حلقوں نے صدر پاکستان وزیر اعظم پاکستان چیف جسٹس آف سپریم کورٹ اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے اپیل ہے کہ فوری نوٹس لیا جائے اور قیمتی خزانہ بچایا جائے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button