پڑی درویزہ

بازار پڑی درویزہ کے قدیمی اور معروف تاجر شیخ محمد اقبال انتقال کر گئے

پڑی درویزہ: بازار پڑی درویزہ کے قدیمی اور معروف تاجر شیخ محمد اقبال انتقال کر گئے ۔

مرحوم شیخ خالد محمود ، ساجد اقبال برادران کے والد گرامی اور حافظ محمد وقاص جاوید ، شیخ نوخیز جاوید برادران کے دادا تھے ۔ مرحوم کے پسماندگان میں دو بیٹے اور ایک بیٹی شامل ہے ۔ مرحوم چند روز سے فالج کے عارضہ میں مبتلا تھے ۔مرحوم کی عمر 84سال تھی ۔

واضح رہے کہ مرحوم بچپن سے تجارت کے شعبہ سے وابستہ ہوئے اور تاحیات اسی شعبہ سے منسلک رہے ۔ شروع میں بازار پڑی درویزہ میں مرحوم نے ہوٹل اور سٹیشنری کے کاروبار سے زندگی کا آغاز کیا ۔بعد میں کریانہ اور جنرل سٹور تک کاروبار کو بڑھا لیا ۔

یاد رہے کہ طویل عرصہ قبل مرحو م کے سٹیشنری سٹور کے متعلق علاقہ کے معروف شاعر ، ادیب سید طالب بخاری نے ایک دلچسپ نظم ’’سستی ہے اقبال کی ہٹی ‘‘ لکھی تھی۔

مرحوم کی موت کا اعلان ہونے کے ساتھ ہی بازار پڑی درویزہ بند ہو گیا اور رات نو بجے نماز جنازہ تک تاجران کے متفقہ فیصلے کے مطابق سوگ میں بند رہا ۔مرحوم کی نماز جنازہ رات نو بجے غربی قدیمی قبرستان کے جنازہ گاہ پڑی درویزہ میں ادا کی گئی ۔

نماز جنازہ کے بڑے اجتماع سے خطیب جامع مسجد اعوان دئیوال قاری عامر علی صدیقی نے روحانی خطاب کیا جبکہ مرحوم کے پوتے خطیب جامع مسجد پرانہ کوٹ حافظ محمد وقاص جاوید نے امامت کی ۔

نماز جنازہ کے اجتماع میں علاقہ بھر سے سیاسی سماجی شخصیات کی اکثریت میں سابق جنرل کونسلر چوہدری امتیاز احمد ، پی ٹی آئی کے کارکن مرزا نذیر حسین، شاہد محمود مغل ،اور عوامی کمپیوٹر کمپوزنگ اینڈ فوٹو سٹیٹ سنٹر پڑی درویزہ کے پروپرائٹر مقامی صحافی ، پروفیسر افتخار محمود بھی شامل تھے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button