جہلم

کرپٹ، بدعنوان افسران و اہلکاروں کو پکڑنے کے لئے شکنجہ تیار کر لیا گیا

جہلم: کرپٹ ، بدعنوان افسران و اہلکاروں کو پکڑنے کے لئے شکنجہ تیار کر لیا گیا، شکنجے سے بچنے کیلئے افسران نے پی ٹی آئی کے نمائندوں کی قربت حاصل کرنے کے لئے ہاتھ پاؤں مارنا شروع کر دیئے ۔

ذرائع کے مطابق ضلعی افسران وا ہلکاروں میں کرپشن اس قدر عروج پر ہے جس کی انتہا نہیں، تمام اداروں کے افسران و اہلکار کرپٹ نہیں لیکن متعدد اداروں کے افسران وا ہلکار صرف اپنے مفادات کا سوچتے ہیں علاقوں کے بااثر افراد و بیرون ملک سے آنے والے افراد افسران کے لئے تحفہ لانا ایک عام سی بات ہے کھانے کا طریقہ زیاہ تر ایک ہی ہے یہ فرائض نچلی سطح پر موجود اہلکار سر انجام دیتے ہیں ، میونسپل کمیٹی اینٹی کرپشن ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ، محکمہ مال، محکمہ ہیلتھ ، پنجاب پولیس، محکمہ معدنیات، محکمہ انہار، محکمہ عشرو زکوٰۃ کمیٹی ، محکمہ تعلیم سمیت متعدد اداروں کے افسران کو لاکھوں روپے رشوت کی مد میں موصول ہوتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق سرکاری افسران اپنے سے وابستہ کام کی قیمت میں اضافہ کرنا بائیں ہاتھ کا کھیل سمجھتے ہیں ، ملکر کھانا تو کوئی ان سے پوچھے ، بیشتر افسران کی بیگمات سرکاری اختیارات کا بے دریغ استعمال عبادت سمجھ کر کرتی ہیں ، نیچے سے شروع ہونے والی کرپشن کی داستان اوپر آخر اختتام افسر شاہی پر ہوتا ہے ، جہاں دام اچھا نہ لگنے کی امید ہو یا کچھ نا ملنے کی امید ہو کام روک دیئے جاتے ہیں ، وزیر اعظم عمران خان کو متعدد افسران کے شاہانہ طرز زندگی کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا ہے اور افسران کے کھانے کے مختلف طریقوں بارے آگاہی فراہم کی گئی ۔

ذرائع کے مطابق ضلع جہلم کے کئی افسران و اہلکار کرپشن و بدعنوانی کے شکنجے میں آئیں گے اگر میرٹ ہوا تو شکنجے سے بچنے کے لئے درجنوں افسران اپنی وابستگیاں تحریک انصاف کے ساتھ منسلک کرنے کی کوششوں میں مصروف عمل ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button