دینہ

امام حسین ؑ کی قربانیاں دین اسلام کی بقا کے ساتھ انسانیت کی فلاح کیلئے تھیں۔ مولانا اوصاف حیدر نقوی

دینہ: پاکستان کا نظریہ اساسی کلمہ لا الہ الااللہ ہے جبکہ لاالہ الاللہ کی بنیاد حسین ؑ ہیں،مولا حسین ؑ کی قربانیاں دین اسلام کی بقا کے ساتھ انسانیت کی فلاح کیلئے تھیں۔

یہ بات مولانا سید اوصاف حیدر نقوی نے مرزا سجاد حسین چشتی قادری کے زیر اہتمام سالانہ محفل مجلس عزاء سے خطاب کے دوران مو ضع باغ مشین پولیس سٹیشن دینہ میں کہی جس میں سینکڑوں سنی شیعہ عزاداروں نے شرکت کی۔

انہوں نے کہا کہ کربلا کی جنگ دو شہزادوں کی جنگ نہ تھی بلکے دو نظریات کی جنگ تھی جس میں شیطانی سوچ کو شکست جبکہ روحانی سوچ کو فتح نصیب ہوئی، جانثارانِ امام مظلوم کربلا نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے اسلام کی ابدی حیات بخش دی، قتل حسین اصل میں مرگ یزید ہے اسلام زندہ ہوگیا، کربلا کے بعد عزاداری سیدالشہدا ء ہماری شاہ رگِ حیات اورذریعہ نجات ہے اس سے ٹکرا نے والا پاش پاش ہو جائے گا۔

مرزا سجاد حسین چشتی نے اپنے خطاب میں انتظامیہ اور شرکا ء مجلس ساداتو مومنین کا شکریہ ادا کیا مجلس عزا ء سے شاعر اھلِیت سید علی اسد جعفری مرزا باقر حسین اور سارے محبانِ اہلبیت نے بھی نذرانہ عقیدت بحضور سید الشہدا امام حسینؑ پیش کیا۔ شعبہ علم باب الحوابح حضرت عباس علمدار پر آمد کی گئی اور ماتم داری بھی کی گئی مجلس عزا ء سے پہلے پرچم کشائی کی گئی۔

ٹی این این جے کے ضلعی جنرل سیکریٹری سید اخلاق حسین نقوی نے عالم، اسلام کے اتحاد استحکام پاکستان مظلومینِ جہاں کی کامیابی و آزادی کیلئے خصوصی دعا کروائی پروگرام لنگر حسینی کی تقسیم کے بعد اختتام پذیر ہوا ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button