جہلم

تاج الشریعہ اختر رضا خان قادری بریلوی کا وصال مسلمانوں کیلئے ایک عظیم صدمہ ہے،سید خلیل حسین کاظمی

جہلم (سلطان رضوی سے) تاج الشریعہ اختر رضا خان علیہ رحمہ کا وصال پوری دنیا کے مسلمانوں کے لیے عظیم صدمہ ہے۔

ان خیالات کا اظہار امیر مرکزی جماعت اہلسنت جہلم سید خلیل حسین کاظمی نے کیا انکا کہنا تھا بریلی شریف کے سجادہ نشین تاج الشریعہ اختر رضا خان قادری بریلوی گزشتہ روز جن کا وصال ہو گیا، ان کا رحلت فرمانا پوری دنیا کے مسلمانوں کے لیے ایک عظیم صدمہ ہے عا لم اسلام ایک عظیم علمی و روحانی شخصیت سے محروم ہو گیا۔

انہوں نے کہا کہ مولانا محمد اختر رضا خان کے والد محمد ابراہیم خان، امام احمد رضا خان کے صاحبزادے محمد حامد رضا خان کے فرزند ارجمند تھے۔2 فروری 1943 کو بریلی میں پیدا ہوئے اور 75 برس عمر پائی معروف شخصیت اور بھارت میں مفتی اعظم کے نام سے شناخت رکھنے والے مولانا اختر رضا خان بریلوی اردن کی رائل اسلامک سوسائٹی کی طرف سے دنیا کے بااثر ترین مسلمانوں کی جاری کردہ فہرست میں ان کا نام بائیسویں نمبر پرتھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ مرحوم نے عربی میں بی۔اے کی سند فراغت نہایت نمایاں اور ممتاز حیثیت سے حاصل کی نہ صرف جامعہ ازہر میں بلکہ پورے مصر میں اول نمبروں سے پاس ہوئے، انہوں نے 2000 ء میں بھارتی صوبے اترپردیش کے شہر بریلی میں اسلامی تعلیمات کیلئے جماعت الرضا کے نام سے ایک اسلامک سینٹر بھی قائم کیا۔ان کی نعتوں پر مشتمل کتاب سفینہ بخشش بھی موجود ہے اس کے علاوہ اسلام کی ترویج و اشاعت کے لیے انکی خدمات کا شمار نہیں اللہ تعالی انکو جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button