کھیوڑہ

انتظامیہ کی بے حسی، کھیوڑہ سینٹری ورکرز دو ماہ سے تنخواہوں سے محروم، ملازمین فاقہ کشی کا شکار

پنڈدادنخان: انتظامیہ کی بے حسی، کھیوڑہ سینٹری ورکرز دو ماہ سے تنخواہوں سے محروم ،دوماہ سے تنخواہیں نہیں دی گئی فاقہ کشی کا شکار ہیں، دکانداروں نے بھی ادھار دینا بند کر دیا ہے، ہمارے روزوں کے ایام اور گڈفرائیڈے بھی اسی طرح گزر گیا، کل عید ہے ہمارے بچے عید کی خوشیاں کیسے منائیں گے۔ سینٹر ی ورکز کا احتجاج

تفصیلات کے مطابق انتظامیہ کی بے حسی کے باعث آبادی کے لحاظ سے ضلع جہلم کے دوسرے بڑے شہر کھیوڑہ کے سنٹری ورکر دو ماہ کی تنخواہوں سے محروم ہیں، سنٹری ورکر احتجاج کرنے پر مجبور ہوگئے۔

ورکرز کا کہنا ہے کہ دو ماہ سے تنخواہیں نہیں دی گئیں اب نوبت فاقوں پر آگئی ہے دکانداروں نے بھی ادھار دینا بند کردیا ہے مہنگائی کے اس دور میں بچوں کا پیٹ پالنا مشکل ہو چکا ہے کل ہماری عید ہے اپیل کرنے کے باوجود بھی ہمیں ہمارے حق سے محروم رکھا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے روزوں کے ایام اور جمعہ الوادع (گڈفرائیڈے )بھی اسی طرح گزر گیا کل عید ہے ہمارے بچے عید کی خوشیاں کیسے منائیں گے ذمہ داران نے بے حسی کی انتہا کردی ہے ہماری محنت کا صلہ دیا جائے اور فوری تنخواہیں ادا کی جائیں تاکہ ہم عید پر اپنے گھر کا راشن پورا کر سکیں اور بچوں کو کپڑے لے کر دے سکیں۔

سینٹری ورکرز نے وفاقی وزیر فواد چوہدری سمیت اعلیٰ حکام سے استدعا کی ہے کہ فوری تنخواہوں کی ادائیگی کی جائے

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button