جہلماہم خبریں

جہلم میں بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ، شہری پریشان، کاروبار ٹھپ

جہلم: شہر و گردونواح کے شہری پچھلے کئی روز سے اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے پریشان ، کئی کئی گھنٹوں کی لوڈ شیڈنگ سے کارروبار ٹھپ، عوامی حلقوں نے احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعظم پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بند کیاجائے ورنہ شہری سڑکوں پر آنے پر مجبور ہو نگے۔
تفصیلات کے مطابق آئیسکو سرکل جہلم کی انتظامیہ نے گزشتہ کئی روزسے بجلی کی اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ، کئی کئی گھنٹوں کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کو شدید مشکلات میں مبتلا کر رکھا ہے، کارروبار زندگی ٹھپ ہونے سے محنت کشوں کے چولہے ٹھنڈے ہو چکے ہیں۔
ٹیلر ماسٹروں سمیت مشینوں کے تمام کارخانے کارروباری مراکز بند ہو چکے ہیں ، جس کیوجہ سے محنت کش مزدور ہاتھوں پر ہاتھ رکھے حکومت کو کوس رہے ہیں، دوکاندار طبقہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے شدید مشکلات کا شکار ہو چکے ہیں ، آج کے جدید دور میں بجلی انسانی زندگی کے لئے ایک مسلمہ حقیقت بن چکی ہے ، بجلی کے بغیر ہر کام کا رک جانا بھی لمحہ فکریہ ہے ، یوں کہنا بے جا نہ ہوگاکہ بجلی کے بغیر انسان کسی کام کا نہیں رہتا، کئی کئی گھنٹوں کی اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے شہری بے بسی کی تصویر بن کررہ گئے ہیں۔
عوامی حلقوں نے وزیر اعظم پاکستان ، وفاقی وزیر پانی و بجلی ، چیئرمین واپڈا سے مطالبہ کیا ہے کہ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بند کیا جائے اور اعلانیہ لوڈشیڈنگ میں کمی کے احکامات جاری کئے جائیں تاکہ محنت کش اپنے بچوں کو رزق حلال کما کر روزی روٹی مہیا کر سکیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button