دینہ

ٰدینہ میں آوارہ کتوں کی بھرمار، ایک اور شہری آوارہ کتوں کا نشانہ بن گیا

دینہ شہر میں آوارہ کتوں کی بھرمار، شہر میں آوارہ کتے شہریوں کی زندگیوں کیلئے شدید خطرہ بن گئے، چوبیس گھنٹوں کے دوران ایک اورشہری آوارہ کتوں کا نشانہ بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق شہریوں کیلئے آوارہ کتے وبال جان بنے ہوئے ہیں لیکن ضلعی انتظامیہ آوارہ کتوں کو تلف کرنے میں تاحال ناکام دکھائی دے رہی ہے، ضلعی حکومت اور انتظامیہ کے تمام تر اقدامات کے باوجود شہری بدستور آوارہ کتوں کا شکار بن رہے ہیں،آوارہ کتوں کا نشانہ بننے والوں میں زیادہ تعداد بچوں اور خواتین کی ہے۔

دوسری جانب آوارہ کتوں کے شہریوں کو کاٹنے کے بڑھتے ہوئے واقعات کے باوجود تلفی سست روی کا شکار ہے۔

شہر کے پوش علاقوں میں آوارہ کتوں کی بھرمار سے دہشت برقرار ہے جبکہ ضلعی کتا مار بریگیڈ کی کارروائیاں محض دعوؤں تک محدود ہیں،علی الصبح نماز فجر کے وقت اسٹیشن محلہ دینہ کے معمر رہائشی محمد نوید کو کتوں کے جھمگٹوں نے گھیر لیا۔شہری نے بہت مشکل سے بھاگ کر جان بچانے کی کوشش کی لیکن آٹھ سے نو کتوں نے چاروں طرف سے حملہ کرنے کی بھرپور کوشش کی۔

کتوں سے جان بچاتے ہوئے شہری محمد نوید بلال مسجد ریلوے اسٹیشن دینہ کے پاس سر کے بل گر پڑے جسکی وجہ سے سر میں شدید چوٹ لگی ان کے قریبی دوست بلال سلیم فورا انھیں اٹھا کر ابتدائی طبی امداد کیلئے نزد پرائمری ہیلتھ سنٹر ایمرجنسی میں لے گئے،وہاں شہری کو ابتدائی طبی امداد فراہم کی گئی۔

اس واقع کے پیشِ نظر انتظامیہ سے ان آوارہ کتوں کی بھر مار کے تدارک کے لیے تمام اہل علاقہ کی پرزور اپیل ہے کہ ان کتوں کا تدارک کیا جائے جس سے اہل علاقہ کی جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے، کتا مار بریگیڈ فوراً نیا محلہ دینہ سے ان آورہ کتوں کو ٹھکانے لگانے کے اقدامات کرے تاکہ معصوم شہریوں کی جان کو تحفظ فراہم کیا جاسکے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button