جہلمالیکشن 2018

گوڑھا سلیم بنیادی سہولتوں سے محروم، علاقہ مکینوں نے عام انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کر دیا

جہلم: یونین کونسل سنگھوئی کا علاقہ گوڑھا سلیم بنیادی سہولتوں سے محروم، علاقہ مکینوں نے 2018 کے عام انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کر دیا، گوڑھا سلیم کے گلی محلوں ، چوک چوراہوں میں الیکشن بائیکاٹ کے بینر آویزاں کر دیئے گئے ۔سیاسی جماعتوں کو مشکلات کا سامنا۔

تفصیلات کے مطابق جہلم کی یونین کونسل سنگھوئی کا علاقہ گوڑھا سلیم آج کے ترقی یافتہ دور میں بھی بنیادی سہولتوں سے محروم ہے، بلدیاتی نظام علاقہ مکینوں کو بنیادی مسائل سے باہر نکالنے میں بری طرح ناکام ، یونین کونسل سنگھوئی کے بیشتر علاقے بنیادی سہولیات سے محروم ،گوڑھا سلیم سیوریج کے نظام کی تباہی کیوجہ سے گلیاں محلے تالاب میں تبدیل ہو چکے ہیں ، گندگی کے ڈھیر علاقہ کی پہچان بن چکے ہیں ۔

گوڑھا سلیم میں پچھلے کئی سالوں سے ترقیاتی کام نہیں ہوئے جس کیوجہ سے علاقہ مکین پتھروں کے دور میں رہ رہے ہیں۔ گاؤں کی نالیاں وغیرہ صفائی ستھرائی نہ ہونے کیوجہ سے بند پڑی ہوئی ہیں جس کی وجہ سے گھروں کا گندہ پانی گلیوں میں کھڑا ہونے سے گلیاں جوہڑوں کا منظر پیش کر رہی ہیں ۔گندگی سے اٹھنے والے تعفن سے بچے ، بزرگ، شہری ، خواتین مختلف وبائی امراض میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

گوڑھا سلیم کے رہائشیوں کا کہنا ہے کہ پچھلے 35 سالوں سے مسلم لیگ ن کے ممبران قومی و صوبائی اسمبلی منتخب ہوتے چلے آرہے ہیں ، منتخب ممبران گاؤں کے لوگوں کو جھوٹی طفل تسلیاں دیکر ووٹ حاصل کرکے علاقہ کی طرف رخ کرنا گناہ کبیرہ سمجھتے ہیں ، جس کی وجہ سے علاقہ مکینوں نے مشترکہ فیصلہ کیاہے کہ 2018 ء 25 مئی کو ہونے والے عام انتخابات کا مکمل بائیکاٹ کیا جائیگااورمسائل کے حل ہونے تک بائیکاٹ جاری رہے گا۔احتجاج کرنے والوں میں سینکڑوں علاقہ مکین موجود تھے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button