دینہ

دینہ میں گیس کی قیمتوں میں مصنوعی اضافے کے ساتھ ساتھ ریفلنگ کا دھندا عروج پر

دینہ میں گیس کی قیمتوں میں مصنوعی اضافے کے ساتھ ساتھ ریفلنگ کا دھندا عروج پر جو کہ کسی بھی بڑے حادثے کا سبب بن سکتا ہے ،جب کہ اس سے قبل بھی دینہ میں گیس ریفلنگ کی وجہ سے حادثات رونما ہو چکے ہیں ،گیس سلنڈر کے ریٹ مقرر کرنے کے لیے حکومت تحصیل سطح پر ایک کمیٹی تشکیل دے اور باقاعدہ ریٹ لسٹ جاری کی جائے ،اسسٹنٹ کمشنر دینہ اپنے دفتر تک محدود ہو کر رہ گئے ۔

تفصیلات کے مطابق تحصیل دینہ گھریلو گیس سلنڈر کی قیمتوں میں من مانی عروج پر ہے اور عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا جا رہا ہے،اس وقت گھریلو چھوٹا سلنڈر مارکیٹ میں 1400جبکہ کمرشل سلنڈر5200روپے میں سیل ہو رہا ہے تحصیل دینہ میں حکومتی بے حسی دیکھنے کو مل رہی اور عوام کی ضروریات زندگی کی اشیاء مہنگی فروخت ہونے کا کوئی نوٹس نہیں لیا جا رہا گیس سلنڈر کے من مانے ریٹوں کی وصولی اور ریفلنگ کی سب سے بڑی وجہ اسسٹنٹ کمشنر دینہ کی عدم توجہی اور صرف دفتر کی حد تک محدود یت ہے۔

اس وقت شہر اور گرد و نواح میں جگہ جگہ گیس ریفلنگ کے پوائنٹ بنے ہوئے ہیں جو کہ آبادی میں ہونے کی وجہ سے کسی بھی بڑے حادثے کا باعث بن سکتے ہیں ،گھریلو گیس سلنڈر شاپ پر حفاظتی اقدامات بھی ناپید ہیں اور دیکھنے کو ملا ہے کہ ان دوکانوں میں سگریٹ نوشی سے پابندی کے کوئی سائن بھی موجود نہیں ہیں اور ان شاپ کے نزدیک بیٹھ کر لوگ سگریٹ نوشی کر رہے ہوتے ہیں ،حکومت وقت ایک عام انسان کو ریلیف دلانے میں بری طرح ناکام دکھائی دیتی ہے۔

عوام الناس نے ڈپٹی کمشنر جہلم سے مطالبہ کیا ہے کہ گھریلو گیس ایک بنیادی ضرورت ہے اور ان کے ریٹ کے حوالے سے باقاعدہ تحصیل سطح پر ایک کمیٹی تشکیل دی جائے اور دوکانداروں کو اس بات کا پابند کیا جائے کہ وہ دوکانوں پر باقاعدہ ریٹ لسٹ آویزہ کریں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button